پاکستان اسٹاک میں تیزی ،سرمایہ کاری کی مالیت میں 52 کروڑ کا اضافہ

102

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) پاکستان اسٹاک ایکس چینج میںکاروباری ہفتے کے آخری روز جمعہ کوکاروبار حصص میں اتار چڑھائوکا سلسلہ جاری رہنے کے بعد تیزی غالب آگئی اورکے ایس ای100 انڈیکس 95.52پوائنٹس کے اضافے سے 40164.02 پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیاجبکہ 57.54فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوںمیں اضافہ ریکارڈکیا گیا جس کے سبب مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 52کروڑ 56لاکھ روپے سے زائدبڑھ گئی تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم جمعرات کی نسبت 21.73 فیصد کم رہا۔گذشتہ روز ٹریڈنگ کا آغاز منفی زون میں ہوا اور سرمایہ کاروںنے ملک میں سیاسی عدم استحکام کے خدشات کے پیش نظر حصص فروخت کرنے شروع کیے جس کے نتیجے میں مندی چھائی رہی اورکے ایس ای100انڈیکس40ہزار کی نفسیاتی حد سے گرتے ہوئے39743پوائنٹس کی سطح پر آگیا تاہم بعد ازاں منافع بخش کمپنیوں کے سستے ہونے والے شیئرز کی خریداری بڑھنے کے سبب مندی کے اثرات زائل ہوگئے اور انڈیکس 40217پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا مذکورہ سطح بھی بعد میں برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی غالب رہی اور کاروبار کے اختتا م پر کے ایس ای100انڈیکس 95.52پوائنٹس کے اضافے سے 40164.02پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای30انڈیکس 63.88پوائنٹس کے اضافے سے16934.86پوائنٹس ،کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 14.54پوائنٹس کے اضافے سے28471.79پوائنٹس پر بند ہوا تاہم کے ایم آئی30انڈیکس 4.57پوائنٹس کے خسارے سے63763.29 پر بند ہوا۔گزشتہ روز مجموعی طور پر391کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 225کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 143 میں کمی اور23کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔مجموعی طور پر 25 کروڑ 42 لاکھ 4ہزار675شیئرز کے سودے ہوئے جبکہ جمعرات کو32کروڑ47لاکھ سے زائد حصص کا کاروبار ہوا تھا۔