ختم نبوت پر ایمان سے ہی شفاعت ممکن ہے، مقررین

53

لاہور (نمائندہ جسارت) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام 39ویں سالانہ تحفظ ختم نبوت کانفرنس کے مقاصد ختم نبوت کے عالمگیر پیغام کو دنیا کے کونے کونے تک پہنچانا ہے اور مخالف قوتوں کو بتانا ہے کہ تحفظ ختم نبوت پرایمان رکھنے سے ہی نجات اور شفاعت ممکن ہے، ختم نبوت کے بابرکت عنوان سے معاشرے کے ہر شخص خاص طور پر مسلم نوجوان نسل کو ختم نبوت اور فتنہ قادیانیت سے آگاہی دینا ناگزیر ہے، 22، 23 اکتوبر کو چناب نگر میں ہونے والی کانفرنس میں مقامی اور بین الاقوامی علماء مشائخ و مفتیان شرکت کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع لاہور کے مولانا عبدالنعیم، سیکرٹری جنرل مولانا قاری علیم الدین شاکر، مولانا عبدالعزیز، قاری جمیل الرحمن اختر، مولانا حافظ محمد اشرف گجر، مولانا خالد محمود، مولانا محبوب الحسن طاہر، مولانا محمد عرفان بزیزی نے خطبات جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مولانا عبدالنعیم نے کہا کہ امت مسلمہ حضرت سیدنا ابوبکرصدیقؓ کے دور سے آج تحفظ ختم نبوت کا فریضہ سرانجام دے رہی ہے اور منکرین ختم نبوت کا تعاقب کر رہی ہے، قادیانی اسلام اور مسلمانوں کا ٹائٹل استعمال کرکے مسلمانوں کو دھوکا دے رہے ہیں۔ حکومت قادیانیوں کو آئین اور قانون کا پابند بنائے۔ تحفظ ختم نبوت اور ناموس انبیاء کرام کیلیے عالمی سطح پر قانون سازی اہم ضرورت ہے، اسلامی ممالک قانون سازی کیلیے اقوام متحدہ سے مشترکہ مطالبہ کریں، ختم نبوت اور ناموس رسالت کا تحفظ آئین پاکستان کا تقاضا ہے، حکومت اپنی آئینی اور قانونی ذمے داری پوری کرے۔