پیپلز پارٹی جلسہ: باغ جناح کی سیکیورٹی ایس ایس یو کے سپرد، تیاریاں شروع

278

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کے تحت سانحہ کارساز 18 اکتوبر کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے باغ جناح میں ہونے والے جلسے کی تیاریاں عروج پر پہنچ گئیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جلسہ گاہ میں اسٹیج کی تیاری، کرسیاں لگانے کا سلسلہ اور لائٹنگ کا کام شروع ہوگیا  ہے جبکہ بدھ کی صبح وزیر تعلیم  و محنت سعید غنی ،  صوبائی جنرل سیکرٹری وقار مہدی، محمد جاوید ناگوری ، نجمی عالم ، سردار خان ، آصف خان سمیت دیگر پارٹی کے عہدیداروں نے جلسہ گاہ کا دورہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی نے کہا کہ جلسہ گاہ میں اسٹیج اور اس کے اطراف کی سیکیورٹی ایس ایس یو کے سپرد کردی گئی اور ان کے کمانڈوز نے یہ ذمہ داریاں سنبھال لی ہیں جبکہ ایس پی جمشید زبیر شیخ نے جلسہ کی سیکورٹی، ٹریفک پلان سمیت دیگر امور کے حوالے سے سعید غنی اور دیگر کو آگاہ کیا۔

رپورٹس کے مطابق وزیر تعلیم و محنت کا کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں کہ جلسہ کی تیاریوں اور جلسہ والے روز بھی ٹریفک کی روانی کم سے کم متاثر ہوں اور سیکورٹی کے نام پر راستوں کو کم سے کم بند کیا جائے اور کوشش کی جائے کہ اتوار کو جلسہ سے قبل کوئی سڑک ٹریفک کے لئے بند نہ ہو تاکہ عوام کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

جلسہ گاہ  کے بارے میں بتاتے ہوئے  پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکرٹری وقار مہدی کا کہنا تھا کہ شرکاء کے داخلے بالخصوص خواتین کے داخلے کے لیے ایسے راستے متعین کیے جائیں تاکہ انہیں کسی قسم کی دشواری نہ ہو اور جلسہ گاہ میں تمام سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں اور میڈیا اہلکاروں کے لیے علیحدہ راستے بنائے گئے ہیں۔

وضح رہے اس موقع پر ایس پی جمشید زبیر شیخ اور دیگر پولیس کے اعلیٰ اہلکار بھی جلسہ گاہ میں موجود تھے۔

دوسری جانب  اسٹیج کی تیار  کے حوالے سے تفصیلات صوبائی وزیر سعید غنی کو فراہم کی گئیں، صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ جلسہ کے لئے 180 فٹ لمبا، 60 فٹ چوڑا اور 20 فٹ اونچا اسٹیج تیار کیا جارہا ہے، جس کو 3 حصوں میں تقسیم کیاجائے گا جبکہ میڈیا کے لئے علیحدہ اسٹیج بنایا جارہا ہے، گراؤنڈ میں سماجی فاصلہ کے تحت 50 ہزار کرسیاں لگائی جائیں گی اور اسٹیج کے عین سامنے والا حصہ خواتین کے لئے مختص کیا گیا ہے۔

خیال رہے ساؤنڈ سسٹم اور لائٹس کی تنصیب کا کام شروع کردیا گیا ہے اور گراؤنڈ میں چاروں اطراف اسپیکرز اور لائٹس لگائے جائیں گے۔