نواز شریف کو برطانیہ کی مدد سے واپس لائیں گے ، عمران خان ۔ ٹاسک وزارت خارجہ اور ایف آئی اے کو سونپ دیا

95

 

اسلام آباد( نمائندہ جسارت) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نوازشریف کو برطانوی حکومت کی مدد سے پاکستان واپس لائیں گے۔منگل کووفاقی کابینہ اجلاس میں انہوں نے سابق وزیراعظم کی وطن واپسی کے لیے کوششیں تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم کی سربراہی میں ہوا جس میںنوازشریف کو وطن واپس لانے کے لیے مختلف پہلوؤں پر غور کیا گیا اور اس حوالے سے وزارت خارجہ اور وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کو ٹاسک سونپ دیا گیا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے نواز شریف کو وطن واپس لانے کے لیے برطانوی حکومت کو ایک بار پھر خط لکھنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔عمران خان نے کہا کہ نواز شریف کو وطن واپس لاکر عدالت پیش کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ احتساب کا عمل بلاتفریق جاری رہے گا، اپوزیشن کواحساس ہوچکاہے کہ این آر او نہیں ملے گا، اپوزیشن جماعتیں اپنے مقدمات سے توجہ ہٹانے کے لیے اداروں کو متنازع بنارہی ہیں، حکومت اپوزیشن کی بلیک میلنگ میں نہیں آئے گی۔ذرائع کے مطابق
وزیراعظم نے ہدایت کی کہ نوازشریف کو وطن واپس لانے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔علاوہ ازیں وزیر اعظم نے اپوزیشن کی تحریک پر نظر رکھنیکے لیے سینئر وزرا پر مشتمل کابینہ کمیٹی بنادی۔کمیٹی میں کابینہ ارکان اسدعمر، شفقت محمود، شیخ رشید، شہزاد اکبر، ڈاکٹر بابر اعوان اور فواد چودھری شامل ہوں گے۔ذرائع کے مطابق کمیٹی اپوزیشن کی تحریک اور دیگر تمام سیاسی معاملات دیکھے گی۔