اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے سے کئی فلسطینیوں کو گرفتار کرلیا

80

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) قابض صہیونی فوجیوں نے مغربی کنارے اور مقبوضہ بیت المقدس سے کئی فلسطینی شہریوں کو گرفتار کرکے قید خانوں میں ڈال دیا۔ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی اہل کاروں نے منگل کی صبح رام اللہ کے مشرق میں کفر مالک گاؤں پر ہلہ بولا اور 2 نوجوانوں کو حراست میں لے کر اپنے ساتھ لے گئے، جن کی شناخت غسان احمد اور ایوب عبد الرحمہ البیرات خاندان سے ہوئی۔ دریں اثنا صہیونی فوجیوں نے کفر مالک میں کارروائیوں کے دوران اسیران میں سے ایک کی گاڑی بھی ضبط کر لی۔ اُدھر الخلیل میں اسرائیلی فوجیوں نے 14 سالہ بچے احمد البدوی کوشمالی الخلیل میں العروب پناہ گزین کیمپ میں اس کے گھر سے گرفتار کیا۔ علاوہ ازیں مغربی الخلیل ہی میں دیر العسل گاؤں میں اشرف الشوامرۃ کے گھر پر بھی ہلہ بولا۔ قابض اہل کاروں نے مربی جنین میں دیوار علاحدگی کے قریب زوبوبا گاؤں کے داخلی دروازے پر رکاوٹیں کھڑی کرکے مقامی رہایشیوں کی نقل وحرکت کو روک دیا۔ طولکرم میں صہیونی فوجیوں نے فارون قصبے میں کئی گھروں پر دھاوا بولا، تاہم اس دوران کسی شخص کو گرفتار نہیں کیا گیا۔ مقبوضہ بیت المقدس میں پولیس افسروں نے منگل کی صبح پرانے شہر میں باب الساہرۃ کے قریب ایک نوجوان کو شدید تشدد کے بعد حراست میں لے لیا۔ اسرائیلی پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ نوجوان نے چاقو سے حملہ کیا تھا۔ ایک روز قبل ہی قابض فوج نے نابلس کے مشرق میں غیر قانونی صہیونی آبادکار بستی ایلون موریہ کے قریب 4 فلسطینی نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔
مغربی کنارہ: قابض صہیونی فوج نے نابلس کے نواح میں یہودی بستی کے قریب سے فلسطینی نوجوانوں کو گرفتاری کے دوران منہ کے بل لٹا رکھا ہے