سندھ لوکل گورنمنٹ نے انجینئروں کو انتظامی عہدے دینا شروع کردیئے

108

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ لوکل گورنمنٹ بورڈ نے عدالت عظمیٰ کے احکامات پر عملدر آمد کرتے ہوئے صوبے بھر کے بلدیاتی اداروں میں انجینئرز کے لیے مخصوص عہدوں پر تعینات بی ٹیک اور ڈپلوماانجینئرز کو عہدوں سے ہٹا کر انتظامی عہدوں پر تعینات کرنے کے احکامات جاری کردیے ہیں۔ گزشتہ روز سیکرٹر ی لوکل گورنمنٹ بورڈ نے 100سے زیادہ بی ٹیک اور ڈپلوما انجینئرز جو مختلف بلدیاتی اداروں میں اسسٹنٹ انجینئرز،ایگزیکٹو انجینئر(ایکسئین)، سپرنٹنڈنگ انجینئرز اور چیف انجینئرز کے عہدوں پر تعینات ہیں، کو عہدوں سے ہٹا کر انتظامی امور سے متعلق عہدوں پر تعینات کرنے کے احکامات جاری کردیے ہیں۔ حکم نامے کے مطابق بلدیہ عظمیٰ کراچی،ضلعی بلدیات کراچی، کمشنر آفس کراچی،سندھ سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈسمیت صوبے کے مختلف بلدیاتی اداروں میں پروجیکٹ ڈائریکٹرز،پبلک ریلیشن آفیسر، ڈائریکٹر ویجلینس، ڈائریکٹر کنٹریکٹ مینجمنٹ،ڈائریکٹر سینیٹشن، ڈائریکٹر پارکس،ڈائریکٹر ہیومن ریسورس مینجمنٹ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر پریکیورمنٹ،ڈائریکٹر واٹر سپلائی تعینات کیا گیا ہے۔واضح رہے دوسال قبل پاکستان انجینئرنگ کونسل کی جانب سے دائر کی گئی پٹیشن پر عدالت عظمیٰ نے ملک بھر میں پروفیشنل انجینئرز کے لیے مخصوص عہدوں پر تعینات بی ٹیک اور ڈپلوما ہولڈر انجینئرز کو عہدوں سے ہٹا کر انجینئرز کو تعینات کرنے کے احکامات دیے تھے تاہم حکومت سندھ کی جانب سے گزشتہ دوسال سے عدالت عظمیٰ کے احکامات پر عملدرآمد کے بجائے ٹال مٹول کی جارہی تھی جس پر پروفیشنل انجینئرز کی جانب سے کئی بار احتجاج بھی کیا گیا تھا۔