کراچی سپر ہائی وے پر مسافر وین میں آتشزدگی، 13 مسافر جاں بحق

206

کراچی(اسٹاف رپورٹر)نوری آباد کے قریب سپر ہائی وے پر مسافر وین میں آتشزدگی سے 13 مسافر جھلس کر جاں بحق ہوگئے۔

حیدر آباد سے کراچی آنے والی مسافر وین میں نوری آباد کے نزدیک اچانک آگ بھڑک اٹھی جس کے نتیجے میں 13 مسافر جھلس کر جاں بحق جب کہ 6 زخمی ہوگئے۔

ترجمان موٹر وے پولیس کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والوں کو طبی امداد کے لئے نوری آباد اسپتال روانہ کیا گیا ہے جن میں ایک بچہ بھی شامل ہے جب کہ آگ لگنے کی وجوہات فی الحال سامنے نہیں آئیں۔

سپر ہائی وے پر حیدرآباد سے کراچی جانیوالی مسافر وین حادثے کا شکار ہوگئی، ٹائی راڈ ٹوٹنے سے الٹنے کے بعد گاڑی میں آگ لگ گئی، 13مسافر جھلس کر جاں بحق ہوگئے، 6 افراد زخمی ہیں۔

موٹر وے پولیس کے مطابق سپر ہائی وے پر مسافر وین ٹائی راڈ ٹوٹنے کے باعث الٹ گئی، حادثے کے بعد گاڑی میں آگ لگ گئی، آگ لگنے کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی، گاڑی میں 20 سے 22 افراد سوار تھے، 6زخمیوں کو نوری آباد اسپتال منتقل کردیا گیا۔

ایدھی حکام کے مطابق وین کئی قلابازیاں کھا کر سڑک سے اتر کر کچے میں جاگری، وین کو کاٹ کر لاشوں کو نکالا جارہا ہے۔

عینی شاہد کے مطابق وین کے آگے جانیوالی گاڑی کا دروازہ ٹوٹ کر گرا، گاڑی کو بچانے کی کوشش میں حادثہ پیش آگیا، کچے میں جانے کے بعد وین میں آگ لگ گئی، شیشہ ٹوٹنے کی وجہ سے میں گاڑی سے نکلنے میں کامیاب ہوا۔حادثے کی اطلاع ملنے پر ایدھی ایمبولینسز اور امدادی ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ گئیں۔موٹر وے پولیس کا کہنا ہے کہ 5 زخمیوں کو نوری آباد اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

موٹروے پولیس کا کہنا ہے کہ مسافر وین حادثے میں ایک سال کی بچی معجزانہ طور پر بچ گئی ہے جبکہ حادثے میں وین ڈرائیور بھی محفوظ رہا ہے۔

سماجی کارکن سعد ایدھی کا کہنا ہے کہ نوری آباد حادثہ کے مقام پر امدادی آپریشن مکمل کرلیاگیاہے، وین حادثے میں ابتک 13افراد کی لاشیں نکالی گئی،5 افراد کو زخمی حالات میں نکالاگیا ہے۔

حادثے کا شکار ہونے والی وین کے ڈرائیور نے کہا کہ حادثہ سے قبل آگے جانے والی گاڑی کا بونٹ نکل کر میری گاڑی کی ونڈ اسکرین پر لگاہے، ونڈاسکرین پر بونٹ لگنے کے بعد میں گاڑی کو کنڑول نہیں کرسکا۔

موٹروے پولیس کو دیے گئے بیان میں ڈرائیور نے بتایا کہ گاڑی بےقابو ہوکر حادثہ کا شکار ہوئی اور پھر اس میں آگ لگ گئی۔