اے پی سی: وزیراعظم سے فوری استعفی کا مطالبہ، حکومت مخالف تحریک چلانے کا فیصلہ

192

اسلام آباد:اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں شریک سیاسی جماعتوں نے آل پاکستان ڈیموکریٹک الائنس‘ کے نام سے نیا اتحاد قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے،جبکہ آئندہ ماہ سے حکومت مخالف تحریک چلانے کااعلان کیا ہے۔

اسلام آباد میں حکومت کے خلاف حزب مخالف کی جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس کا انعقادہوا، جس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف، نائب صدر مریم نواز، جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان، جے یو پی کے اویس نورانی اور دیگر جماعتوں کے قائدین و رہنماؤں نے شرکت کی۔ پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

اپوزیشن جماعتوں نے نیا اتحاد بنانے کا فیصلہ کیا ہے، جسے’پاکستان ڈیموکریٹک الائنس‘ کا نام دیا گیا ہے، اپوزیشن جماعتوں نے ملک گیر حکومت مخالف احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا جس کے تحت اکتوبر میں احتجاج اور عوامی ریلیاں نکالی جائیں گی جس میں تمام اپوزیشن جماعتیں شریک ہوں گی، جن میں ملک میں آزاد شفاف نئے انتخابات کا مطالبہ کیا جائے گا۔

جنوری 2021 میں اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کیا جائےگا، حکومت کو صرف جنوری تک وقت دیا جائے گا، نئے انتخابات نہ کرانے پر دھرنا یا مارچ شروع کیا جائے گا، اس دوران اسمبلیوں سے مستعفی ہونا بھی آپشنز میں شامل ہوگا۔

ذرائع کے مطابق آل پارٹیز کانفرنس میں اپوزیشن جماعتوں نے ’میثاق پاکستان‘ کی تیاری کے لیے کمیٹی بنادی ہے، میثاق پاکستان ’میثاق جمہوریت‘ کی طرز پر ہوگا۔