چیف جسٹس ایس بی سی اے کے خلاف سخت نوٹس لیں‘خرم شیرزمان

93

کراچی(نمائندہ جسارت)پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدرو رکن سندھ اسمبلی خر م شیر زمان کا لیاری میں بلڈنگ گرنے کی جگہ کا دورہ کیا۔خرم شیر زمان کا واقعے میں ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ پہلے مہینے میں ایک بلڈنگ گرتی تھی۔اب ہفتے میں دو بلڈنگ گرتی ہیں۔سندھ بلدنگ کے ڈائریکٹر ریٹائر ہوتے ہی یہاں سے بھاگ جاتے ہیں۔یہ لوگ صرف نوٹ بنانے میں مصروف ہیں۔ہر فلور کے لیے لاکھوں روپے لیے جاتے ہیں۔جس دور میں بلڈنگ بنی اس ڈائریکٹر کو گرفتار کیا جائے۔لوگ مررہے ہیں سندھ حکومت سو رہی ہے۔وزیر اعلیٰ سندھ فوری استعفا دیں۔انہوں نے مزید کہا کہ چیف جسٹس سے گزارش ہے کہ ایس بی سی اے کے خلاف سخت نوٹس لیں،سندھ حکومت ان کے خلاف کارروائی نہیں کرے گی۔اپنے بچوں کے لیے انہوں نے بنگلے بنا لیے ہیں لیکن یہاں رہنے والے غریب مر جاتے ہیں۔اس نالائق سندھ حکومت نے ہر طرف تباہی کردی ہے۔لیاری کوئلہ گودام کے قریب عمارت گرنے کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے۔واقعے میں زخمیوں کی صحتیابی کے لیے دعاگو ہیں۔غفلت برتنے والے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے افسران کوگرفتارکرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ایس بی سی اے کا ادارہ سندھ حکومت کا اے ٹی ایم بنا ہوا ہے۔آئے روز شہر میں حادثات سے انسانی جانوں کے نقصان پر سندھ حکومت کو شرم آنی چاہیے۔خرم شیرزمان نے ٹائیگر فورس کے رضاکار وں کو ہدایت کی کہ وہ ریسکیو کے کام میں اداروں کی مدد کریں۔