موٹروے کیس : نامزد ملزم وقار الحسن نے گرفتاری دیدی،صحت جرم سے انکار

156

لاہور (صباح نیوز) موٹر وے زیادتی کیس میں نامزد ملزم وقار الحسن نے سی آئی اے ماڈل ٹائون تھانے میں پیش ہو کر پولیس کو گرفتاری دیدی ، ملزم نے صحت جرم سے انکار کیا ہے ۔لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر گجرپورہ کے قریب خاتون سے زیادتی کے کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ خاتون سے زیادتی کے الزام میں نامزد ایک وقار الحسن نے تھانہ سی آئی اے ماڈل ٹائون میں پیش ہو کر اپنی گرفتاری دی ہے اور سی آئی اے پولیس کی ملزم وقار الحسن سے تفتیش جاری ہے۔ ذرائع نے بتایاہے کہ ملزم وقارالحسن رشتے داروں کے دبائو کی وجہ سے ماڈل ٹائون پولیس کے روبرو پیش ہوا۔ ذرائع کے مطابق وقار الحسن نے پولیس کو بتایا کہ ملزم عابد کے ساتھ دیگر مقدمات میں شریک ملزم رہا ہوں، لیکن موٹر وے زیادتی کیس سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے۔ ملزم کا کہنا تھا کہ میرے نام پر جاری سم میرا سالا استعمال کرتا ہے، ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کو تیار ہوں۔ دوسری جانب پولیس نے وقارالحسن کے رشتے دار پر بھی واردات میں ملوث ہونیکا شبہ ظاہر کیا ہے، پولیس ذرائع کے مطابق عباس مبینہ طور پر موٹروے زیادتی کیس میں ملوث ہے جس کو جلد پیش کرنے کا امکان ہے۔ خیال رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب انعام عنی نے گزشتہ روز موٹر وے زیادتی کیس میں ملوث 2 ملزمان عابد اور وقارالحسن کی نشاندہی کی تھی۔ گزشتہ روز اعلیٰ سطح کی پریس کانفرنس میں ملزم وقار کی تفصیلات جاری کی گئی تھیں اور بتایا گیا تھا کہ ملزم وقار قلعہ ستار شاہ شیخوپورہ کا رہنے والا ہے۔