زیادتی کے بعد بچی قتل، ملزمان کو عبرتناک سزا دی جائے، سید عبدالرشید

112

چئیرمین ورکس اینڈ سروسز کمیٹی ایم پی اے و امیر جماعت اسلامی جنوبی کراچی سید عبدالرشید کا پرانی سبزی منڈی کی رہائشی 5 سالہ مروہ کے اغواہ جنسی زیادتی کے بعد قتل پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے واقعہ میں ملوث بھیڑیوں کو گرفتار کر کے عبرتناک سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

میڈیا کو جاری بیان میں سید عبدالرشید نے کہا کہ معصوم پھول سے جنسی زیادتی کرنے اور قتل کر کے جلا دینے والے انسان نہیں ہوسکتے ،  حکومت سندھ سنجیدگی کا مظاہرہ کرے،عوام اس مسئلے پر بھرپور احتجاج کرے اور مروہ کو انصاف دلوائے،

رکن سندھ اسمبلی نے کہا کہ مروہ کے اہل خانہ کا دکھ کوئی نہیں بانٹ سکتا ایسے واقعات کو روکنے کے لیے فوری قانون سازی کی ضرورت ہے، مروہ کے والدین کا دکھ کم کرنے کا ایک ہی طریقہ ہے کے ملزمان کو فوری گرفتار کر کے عبرتناک سزا دی جائے۔

واضح رہے کہ عیسیٰ نگری میں کچرا کنڈی سے 5 سالہ بچی کی لاش ملنے کے واقعے کی تحقیقات جاری ہیں اور پولیس نے جائے وقوعہ کے اطراف سے 11 افراد کو حراست میں لے کر ان کا ڈی این اے ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفتیشی پولیس پہلے ہی کیس میں 2 افراد کو حراست میں لے چکی ہے جس سے تفتیش جاری ہے، ڈاکٹرذکیہ نے بچی سے جنسی زیادتی کی تصدیق کی ہے۔