کوئٹہ میں مسجد کے قریب  بم دھماکے کا مقدمہ درج

199

کوئٹہ: بلوچستان کے شہر کوئٹہ کے سریاب روڈ پر ہونے والے دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق دھماکے کا مقدمہ کائونٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) میں ایس ایچ او کی مدعیت میں نامعلوم افراد کے خلاف درج کیا گیا۔ مقدمے میں قتل، اقدام قتل اور دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

نمائندہ جسارت کے مطابق گزشتہ روز کوئٹہ کے سریاب روڈ پر ولی جیٹ کے علاقے میں مسجد کے قریب بم دھماکا ہوا تھا جس میں 3 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

دھماکا موٹر سائیکل میں نصب بم پھٹنے کے باعث ہوا۔ واقعے کے فوری بعد پولیس، ریسکیو کی ٹیموں نے جائے وقوع پر پہنچ کر متاثرہ علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور بم ڈسپوزل اسکواڈ کو طلب کرلیا تھا۔

پولیس حکام کا کہنا تھا کہ دھماکا ٹائم ڈیوائس کے ذریعے کیا گیا جس میں 2 سے ڈھائی کلو دھماکا خیز مواد اور بال بیرنگ کا استعمال کیا گیا۔

علاوہ ازیں کوئٹہ میں دھماکے کے بعد آئی جی سندھ نے صوبائی پولیس کو الرٹ رہنے کے احکامات جاری کردیے۔ جس میں کہا گیا کہ صوبائی سطح پر سیکورٹی کے انتظامات کو مزید سخت کیاجائے، کراچی سمیت صوبے بھر کے پولیس افسران کو کہا گیا کہ پیٹرولنگ، پکٹنگ اور رینڈم اسنیپ چیکنگ کے عمل کو سخت کردیا جائے اور ایس پی، ڈی ایس پی اور ایس ایچ اوز علاقوں میں اپنی موجودگی کو یقینی بنائیں، ساتھ ہی تمام مساجد، امام بارگاہوں اور دیگر اہم مقامات پر سیکورٹی کو غیر معمولی بنانے کی ہدایت بھی جاری کی گئی۔