امریکا میں موجود چینی سفارت کاروں پر نئی پابندیاں

111

واشنگٹن (انٹرنیشنل ڈیسک) امریکا نے ملک میں موجود تمام چینی سفارت کاروں پر نئی پابندیاں عائد کردی ہیں۔ خبر رساں اداروں کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے ایک بیان میں تصدیق کی ہے کہ چینی سفارت کاروں کو اب جامعات کے کیمپس میں جانے اور مقامی حکومت کے عہدے دارں سے ملاقات کے لیے محکمہ خارجہ سے پیشگی اجازت لینا ہوگی، اس کے علاوہ چینی سفارت خانے سے باہر ایسی ثقافتی تقریبات منعقد کرنے کے لیے بھی باقاعدہ منظوری لینا ہوگی جن کے شرکا کی تعداد 50 سے زیادہ ہوگی۔ امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق چینی سفارت خانے اور قونصلر کے زیر استعمال تمام سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی بھی مکمل تصدیق کے لیے کارروائی کو یقینی بنایا جائے گا۔ بتایا گیا ہے کہ یہ پابندیاں چین میں موجود امریکی سفارتکاروں پر لگائی گئی پابندیوں کا رد عمل ہے۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ہم چین سے برابری کی سطح پر تعلقات چاہتے ہیں، چین میں امریکی سفارتکاروں کو جتنی اجازت اور آزادی دی گئی ہے امریکا میں بھی چینی سفارتکاروں کو اتنی ہی رسائی دی جائے گی اور حالیہ امریکی اقدام اسی سمت کی جانب قدم ہے۔ دوسری جانب چینی سفارت خانے نے امریکی پابندیوں کی مذمت کرتے ہوئے اقدام کو ویانا کنونشن کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔