توہین عدالت اور کرپشن، میونسپل کمشنر بلدیہ جنوبی اختر شیخ معطل

112

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ڈائریکٹر سندھ لوکل گورنمنٹ بورڈ نے میونسپل کمشنر بلدیہ جنوبی اختر شیخ کو اختیارات کے ناجائز استعمال، سرکاری ریونیو کو نقصان پہنچانے اور عدالت عظمیٰ کے احکامات کی خلاف ورزی پر معطل کردیا جبکہ دوران معطلی انہیں سندھ لوکل گورنمنٹ بورڈ رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اشتہاری بورڈ کے ماسٹر مائند نیب کے ہاتھ گرفتار سابق سیکرٹری بلدیات روشن شیخ کے قریبی عزیز اختر شیخ پر میونسپل کمشنر کی حیثیت سے
عدالت عظمیٰ کے احکامات کے برخلاف ضلع وسطی، ضلع شرقی اور ضلع جنوبی میں سیکڑوں اشتہاری بورڈ ز نصب کرنے کی اجازت دینے اور اشتہاری بورڈ کی مد میں حاصل ہونے والے سرکاری کروڑوں روپے خورد برد کرنے کے الزامات ہیں جبکہ حالیہ بارشوں کے دوران شارع فیصل پر موٹر سائیکل سواروں پر غیر قانونی اشتہاری بورڈ گرنے کے واقعے پر سابق سیکرٹری بلدیات روشن شیخ نے اختر شیخ کے خلاف کارروائی کرنے کے بجائے ان کے ماتحت 2 افسران کو معطل کردیا تھا جبکہ اس سے قبل اختر شیخ جب میونسپل کمشنر ضلع وسطی تعینات تھے تب بھی بدعنوانی کے الزامات پر ان کے خلاف نیب نے تحقیقات شروع کی تھیں تاہم اس سے پہلے کہ تحقیقات کسی انجام پر پہنچتیں اختر شیخ نے اپنا تبادلہ میونسپل کمشنر بلدیہ شرقی کرالیا تھا مگر بلدیہ شرقی میں تعیناتی کے بعد اختر شیخ نے اپنے دست راست افسران سے مل کر ضلع شرقی کو بھی غیر قانونی اشتہاری بورڈز کا جنگل بنادیا جس کی شکایات پر اینٹی کرپشن ایسٹ زون نے اختر شیخ سمیت محکمہ ایڈورٹائزمنٹ کے 13 افسران کے خلاف مقدمات درج کرنے کیلیے حکام سے سفارش کی تھی مگر اس مرتبہ بھی اختر شیخ نے اثر و رسوخ استعمال کرکے اپنا تبادلہ بلدیہ جنوبی کرالیا تھا۔