شاعر فہمیدہ ریاض کی بیٹی نے صدارتی ایوارڈ لینے سے انکار کردیا

371

مشہور شاعر فہمیدہ ریاض کی بیٹی نے حکومت کی جانب سے اپنی مرحومہ والدہ کے لئے اعلان کردہ صدارتی ایوارڈ سے انکار کرتے  ہوئے کہا کہ ریاست صحافیوں اور ادیبوں کو اغوا اور تشدد کر رہی ہے۔

فیس بک پر ویرتا علی یوجان نے پوسٹ کیا، ایوارڈز سیکشن امی کے ایوارڈ سے متعلق سرمایہ کاری کی تقریب کے بارے میں مجھ سے رابطہ کر رہے ہیں، میں اس وقت ان کے  کام کا ایوارڈ کیسے قبول کرسکتا ہوں؟ جب کے انصاف اور مساوات کے لئے ساری زندگی جدوجہد کی ہے ۔

مصنفین اور صحافیوں کو اغوا کیا جارہا ہے ، تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے ، یہاں تک کہ قتل بھی کیا جارہا ہے، تکلیف کا سبب بنے والوں کو ایوارڈ دیا جارہا ہے، کراچی سٹرنے کے لیے سیوریج میں چھوڑ دیا ہے ۔

ویرتا علی یوجان  نے مزید کہا کہ لہذا آپ کا شکریہ نہیں،   میں اپنی والدہ کے کام کے لئے صدارتی ایوارڈ سے انکار کر رہا ہوں،  مجھے یقین ہے کہ اگر وہ آج زندہ ہوتی تو اس نے انکار کردیتیں۔

فہمیدہ ان ادیبوں میں شامل تھیں جنھوں نے جنرل ضیاء الحق کی فوجی حکمرانی اور سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی کے خلاف مہم چلائی تھی،  آپ اپنے وقت کی نامور  اردو شعراء میں شامل تھیں،  آپ کا انتقال 72سال کی عمر میں 21نومبر2018 میں ہوا۔