کورونا کیسز میں کمی، پی سی بی کا کرکٹ سرگرمیاں بحال کرنے کا فیصلہ

324

لاہور:پاکستان کرکٹ بورڈ نے کوویڈ19 پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کرتے ہوئے ملک بھر میں کرکٹ کی سرگرمیوں کی مرحلہ وار آغاز کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پہلے مرحلے میں حکومت کی جانب سے جاری کردہ کوویڈ 19 پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کرتے ہوئے فی الحال موجودہ کرکٹرز کے لیے سہولیات کھولنے اور تفریحی کرکٹ کی دوبارہ بحالی کی اجازت دی ہے۔

آئندہ کرکٹ سیزن کی تیاری کے لیے ایلیٹ کھلاڑیوں کو محفوظ ماحول کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے اس عمل کی تیاری میں پی سی بی کے میڈیکل اینڈ اسپورٹس سائنسز نے صورتحال کا بغور جائزہ لیا ہے۔

 دوسرے مرحلے میں پی سی بی  ڈومیسٹک کرکٹ سیزن سے متعلق اپنے پروٹوکولز جاری کرے گا۔ پی سی بی ملک میں کورونا وائرس کی بدلتی صورتحال کا مسلسل جائزہ لے رہا ہے اور اس ضمن میں جب مناسب سمجھے گا پروٹوکولز میں تبدیلی کرسکے گا۔

ایسے کرکٹرز جنہوں نے گذشتہ 12 ماہ کے دوران ایج گروپ، ویمنز اور مینز کرکٹ میں پاکستان کی نمائندگی کی، سابق کرکٹرز جو پی سی بی کیروزمرہ  انتظامی امور میں شامل ہیں یا وہ کھلاڑی جن کا ری ہیب پروگرام جاری ہے، انہیں کوویڈ 19 پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کرتے ہوئے ان سہولیات کو استعمال کرنے کی اجازت ہے۔

 سماجی فاصلے کے معیاری پروٹوکولز پر مکمل عمل کیا جائے گا اور ایک ہی سامان کو اسٹیرلائز کیے بغیر متعدد افراد کو استعمال کی اجازت نہیں ہوگی۔کھلاڑیوں کو اپنے اسسٹنٹ اور ہیلپرز ہمراہ لانا منع ہوگا جبکہ نیٹ باؤلرز کی نامزدگی اور منظوری کے لیے بھی نیشنل ہائی پرفارمنس سنٹر کے حکام سے رابطہ کرنا ہوگا۔

بین الاقوامی کرکٹ کے معیار کے مطابق کھلاڑیوں کو نیٹ پریکٹس کے دوران گیند کو تھوک لگانے کی اجازت نہیں ہوگی۔این ایچ پی سی میں آمد پر کھلاڑیوں کو اپنے چہرے ماسک سے ڈھاپننے اور داخلی دروازے پر اپنا بخار چیک کرانا ہوگا۔ اس دوران کھلاڑیوں کو ڈس انفیکیشن گیٹ سے گزرنا اور اپنی مقررہ جگہ پر ہی ٹریننگ کرنا لازم ہوگا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس ندیم خان نے کہا کہ ان پروٹوکولز کی تیاری اس لیے بھی ضروری تھی تاکہ ہمارے ایلیٹ کھلاڑی ایک بہترین اور محفوظ ماحول میں آئندہ سیزن کی تیاری کرسکیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ ایک جامع اور مربوط پلان کی تیاری پر اپنی میڈیکل ٹیم کا شکریہ ادا کرنا چاہتے ہیں، انہیں اعتماد ہے کہ یہ ٹیم ہمارے کھلاڑیوں کی صحت اور حفاظت کو یقینی بنائے گی۔

ندیم خان کا کہناہے کہ تفریحی کرکٹ(غیر پیشہ ور)پر ہمارا کنٹرول تو نہیں ہے مگرپاکستان میں کھیل کی گورننگ باڈی کی حیثیت سے تمام منتظمین سے درخواست کرتے ہیں کہ ان سرگرمیوں میں شریک افراد کو حکومت کے  پروٹوکولز برائے کوویڈ19 پر مکمل عمل کرنے کو یقینی بنائیں کیونکہ یہ خود ان کے، ان کے عزیز و اقارب اور کرکٹ کے بہترین مفاد میں ہے۔