شہری حکومت کا قیام ہی کراچی کے مسائل کا حل ہے، شاہد ہاشمی

108

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) امیر جماعت اسلامی ضلع شرقی سید شاہد ہاشمی نے کہا ہے کہ کراچی کی تباہی و بربادی پر ہر شہری نوحہ کناں ہے ‘ بدقسمتی سے، ہمارا ملک تاحال، جاگیردارانہ سوچ، مزاج اور کلچر سے آزاد نہیں ہوسکا ۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں اختیارات نچلی سطح پر منتقل کرتے ہوئے بڑے شہروں میں خود مختار اور با اختیار بلدیاتی حکومتوں کا نظام قائم کیا گیا ‘لیکن وطن عزیز پر قابض ایلیٹ کلاس کسی کو کچھ دینا نہیں صرف لینا چاہتی ہے۔ ممتاز دانشور شاہد ہاشمی نے کہا کہ وفاق سے بے شمار اختیارات صوبوں کو مل گئے ہیں مگر صوبائی حکومتیں مقامی حکومتوں کے پہلے سے موجود اختیارات بھی سلب کرتی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت وڈیرہ شاہی کی نفسیات کی کلاسیکل مثال ہے اس حکومت نے کراچی میں کچرا اٹھانے کا کام بھی بلدیہ کراچی سے واپس لے لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رواں صدی کی پہلی دہائی میں شہری حکومتوں کا تجربہ کامیاب رہا تھا پی پی کی سندھ حکومت نے اس کی جگہ کراچی کو ایک ناکارہ اور ناقص نظام دیا ہے، سید شاہد ہاشمی نے مطالبہ کیا کہ ملک بھر میں بڑے شہروں میں مکمل دستوری تحفظ کے ساتھ شہری حکومتوں کا نظام قائم کیا جائے۔ بلدیاتی انتخابات کا جلد انعقاد کرایا جائے۔ شہری حکومتوں کو وسائل فراہم کیے جائیں اور ارکان اسمبلی کی مداخلت پر پابندی لگائی جائے۔ اس فیصلے سے شہریوں کی روز مرّہ زندگی میں۔۔سہولت اور آسانی پیدا ہوگی اور نئے صوبے بنانے کی آواز بھی مدھم پڑ جائے گی۔