بالوں کی تندرستی میں معاون غذائیں

465

بالوں کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم میں سے بیشتر خاص طور پر خواتین گھنے اور چمکدار بالوں کی دیوانی ہوتی ہیں جبکہ بالوں کی افزائش اور گرنے، ان کی حالت اور معیار کا بڑا انحصار ہمارے جینز پر ہوتا ہے،مگر ہماری زندگیوں کے دیگر عناصر بھی بالوں کی صحت پر منفی اثرات مرتب کرتے ہیں جس سے وہ کمزور، خشک اور گرنے لگتے ہیں جس میں غذا بھی شامل ہے۔

یہاں ہم آپ کو 9 ایسی غذاؤں کا ذکر کیا جارہا ہے جو آپ کے بالوں کو چمکدار، مظبوط اور گھنے رکھنے میں مددگار ثابت ہوں گی۔

سالمن (مچھلی)

رائٹرز فوٹو

مچھلی کی یہ قسم یعنی سالومن اومیگا تھیر فیٹی ایسڈز کے حصول کا بہترین ذریعہ ثابت ہوتی ہے۔ یہ عنصر ہمارے بالوں کے لیے بہت اچھا ثابت ہوتا ہے جو کہ بالوں کو غدود کو کھول کر صحت بخش نشونما کو فروغ دیتا ہے۔ جسم میں اومیگا تھری کی کمی کی ایک نشانی سر میں خشکی بھر جانا اور روکھے بال ہوتے ہیں۔

پالک

اسکرین شاٹ

پالک کو غذا کا حصہ بنانا خوراک کے ذریعے غذائیت حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے کیونکہ اس میں وٹامنز بی، سی اور ای کے ساتھ ساتھ پوٹاشیم، کیلشیئم، آئرن، میگنیشم اور اومیگا تھری شامل ہوتے ہیں اور یہ سب اچھے صحت مند بالوں کیلئے درکار ہوتے ہیں۔

دالیں

فوٹو بشکریہ وکی پیڈیا

دالیں زنک اور بائیوٹین کے حصول کا اچھا ذریعہ ہیں جو بالوں کی صحت میں مددگار ثابت ہوتے ہیں، جبکہ یہ پروٹین کے حصول کا بھی بہترین ذریعہ ہیں جو کہ بالوں کو لمبا کرنے کے لیے ضروری ہے۔ پروٹینز بالوں کے کناروں کو بھی مضبوط بنانے میں مدد فراہم کرتے ہیں، الغرض دالوں کا استعمال بالوں کی صحت مند نشوونما کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے اور اسے اپنی غذا کا حصہ بنانا بہت مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔

شکرقندی

اے ایف پی فوٹو

شکرقندی ایک جز بیٹا کروٹین سے بھرپور ہوتی ہے جو کہ جسم میں جاکر وٹامن اے میں تبدیل ہوجاتا ہے۔ اس وٹامن کی کمی کا نتیجہ اکثر خشک جلد کی شکل میں نکلتا ہے جو کہ بالوں میں خشکی اور اس کے جھڑنے کی صورت میں بھی نظر آتا ہے۔ صحت مند سر کی سطح کے لیے غذا میں زیادہ بیٹا کروٹین کو شامل کرنا ضروری ہے اور شکرقندی اس کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے۔

اوئیسٹر

فوٹو بشکریہ وکی پیڈیا

اوئیسٹر زنک کے حصول کا بہترین ذریعہ ثابت ہوتے ہیں جو کہ جسم کے لیے بہت اہم اینٹی آکسائیڈنٹ ہے۔ زنک بالوں کی نشوونما میں بھی مدد فراہم کرتا ہے اور سر کی جلد کو خشکی سے بچا کر ان میں نمی صحت مند سطح پر برقرار رکھتا ہے۔ اس جز کی کمی کا نتیجہ بالوں کا تیزی سے گرنے کی صورت میں نکلتا ہے۔

انڈے

اے ایف پی فوٹو

کچھ افراد کچے انڈوں کو ہی اپنے بالوں پر لگا کر انہیں کنڈیشنر کرنے کی کوشش کرتے ہیں مگر آپ انہیں کھا کر بھی یہ فوائد حاصل کرسکتے ہیں۔ پروٹین سے بھرپور ہونے کے ساتھ ساتھ انڈوں میں بائیوٹین بھی ہوتا ہے جو کہ وٹامن بی کی ایک قسم ہے جو کہ سر کی صحت اور بالوں کی نشوونما کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے۔

اخروٹ

فوٹو بشکریہ وکی پیڈیا

اخروٹ دیگر نیوٹریشنز کے ساتھ بائیوٹین کے حصول کے لیے بھی بہترین ہوتے ہیں، جیسا اوپر بتایا گیا ہے کہ یہ جز سر کی صحت اور بالوں کی نشوونما کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے جبکہ یہ بالوں کو سیدھا رکھنے اور ان کے گرنے کی رفتار کو بھی کم کرتا ہے۔ اخروٹ میں وٹامن ای بھی موجود ہوتا ہے جس کی کمی بالوں کو کمزور کردیتی ہے اور وہ آسانی سے ٹوٹ جاتے ہیں۔

گاجر

فوٹو بشکریہ وکی پیڈیا

گاجروں کے بارے میں اکثر سوچا جاتا ہے کہ یہ آنکھوں کے لیے بہترین سبزی ہے مگر یہ آپ کے بالوں کے لیے بھی بہت فائدہ مند ثابت ہوتی ہے۔ کیروٹین اور وٹامن اے سے بھرپور یہ سبزی بالوں کو جگمگا دیتی ہے اور ان کو قدرتی کنڈیشنر فراہم کرتی ہے کیونکہ یہ بالوں میں قدرتی تیل کی سطح کو برقرار رکھتی ہے اور خشکی نہیں ہونے دیتی۔

چکن

فوٹو بشکریہ وکی پیڈیا

معیاری پروٹین صحت مند بالوں کے لیے ضروری ہے اور اس کے بغیر یا ناقص معیار کے نتیجے میں بالوں کی تباہی یقینی ہوجاتی ہے۔ پروٹین کی کمی بالوں کی رنگت کے اڑنے یا ان کے سفید ہوجانے کا باعث بھی بن جاتی ہے، مرغی کا گوشت چونکہ پروٹین سے بھرپور ہوتا ہے جو بالوں کی مضبوطی بڑھانے کے ساتھ ساتھ ان کی نشوونما کو بھی صحت مند بنانے میں مدد فراہم کرتا ہے۔