اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینی نوجوان جاں بحق

176

رم اللہ:رم اللہ کے مغربی گاؤں میں اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے زخمی ہونیوالا 16 سالہ فلسطینی نوجوان زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا ہے۔

ابو مشعل گاؤں کے میئر عماد زہران نے کہا کہ گزشتہ  رات اسرائیلی فوجیوں کی گولی سے زخمی ہونیوالا 16 سالہ محمد مطار جمعرات کی صبح زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا ہے۔

زہران نے وافا نیوز ایجنسی کو بتایا کہ گاں پر دھاوا بولنے والے اسرائیلی فوج کے ایک دستے اور درجنوں نوجوانوں کے مابین جھڑپیں بدھ کے روز شروع ہوئیں۔

زہران نے کہا کہ اسرائیلی فوجیوں نے براہ راست  فائرنگ کرتے ہوئے 3 نوجوانوں کو گولیاں مار کر زخمی کر دیا ۔

انہوں نے کہا کہ طبی عملہ 2 زخمیوں کو علاج معالجے کیلئے ہسپتال لے گیا اور فوجیوں نے محمد مطار کر گرفتار کر لیا جو شدید زخمی تھا،زہران نے کہا کہ لڑکے کی آج صبح زخموں کے باعث موت ہو گئی ہے اور اسرائیلی فریق اس کی میت قبضہ میں رکھے ہوئے ہے۔

اسرائیلی فوج نے اس سے قبل کہا تھا کہ اسرائیلی فوجی دستے نے فلسطینی نوجوانوں کے ایک گروہ کی جانب سے اسرائیلی فوج کے ایک دستے پر آتش گیر گولے پھینکنے کی کوشش ناکام بنا دی ہے۔

اس میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کے دستے نے فائرنگ کرکے اس گروہ میں سے 3 افراد کو زخمی کر دیا جس کی مزید تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔