قرآن

66

بستی والے کہنے لگے’’ ہم تو تمھیں اپنے لیے فال بد سمجھتے ہیں۔ اگر تم باز نہ آئے تو ہم تم کو سنگسار کردیں گے اور ہم سے تم بڑی دردناک سزا پاؤ گے‘‘۔ رسُولوں نے جواب دیا’’ تمھاری فال بد تو تمھارے اپنے ساتھ لگی ہوئی ہے۔کیا یہ باتیں تم اس لیے کرتے ہو کہ تمھیں نصیحت کی گئی ؟ اصل بات یہ ہے کہ تم حد سے گزرے ہوئے لوگ ہو‘‘۔
(یٰسین: 18-19)