گورنر راج سے پہلے سندھ حکومت روش بدلے ، وفاقی حکومت کا انتباہ

165

 

اسلام آباد(نمائندہ جسارت) وفاقی حکومت نے کہاہے کہ اس سے پہلے کہ گورنر راج کی بات کریں سندھ حکومت روش بدلے۔پیر کواسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ سندھ حکومت مینڈیٹ پر پورا نہیں اتری، سندھ حکومت نے عوام کے لیے کچھ نہیں کیا اور کراچی کا حال سب کے سامنے ہے، سندھ حکومت کے اقدامات سے سندھ کے عوام کو تکلیف ہو رہی ہے۔ان کا کہنا تھاکہ سندھ اپنے حصے کی گندم نہیں دے رہا جس کی وجہ سے قیمتیں بڑھ رہی ہیں، گندم نہ دینے کے باعث سندھ کے عوام کو مشکلات ہیں، آٹے کی قیمت میں اضافے کی وجہ سندھ حکومت کا حصے کا اسٹاک ریلیز نہ کرنا ہے، صوبوں میں طلب ورسد سے وفاق کا تعلق نہیں ہے۔شبلی فراز نے کہا کہ ہم چار صوبے نہیں چار بھائی ہیں، سندھ حکومت کو بھی ہمارے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے تھا لیکن بدقسمتی سے سندھ حکومت ہمارے
ساتھ کھڑی نہیں ہوئی۔وفاقی وزیرکا یہ بھی کہنا تھا کہ تاثر دیا جارہا ہے کہ مارکیٹ میں آٹے کی قیمت بڑھ رہی ہے، یہ تاثر بھی دیا جارہا ہے کہ گندم کی پیداوار کم ہوئی، سندھ اور پنجاب گندم کی پیداوار والے صوبے ہیں،پاکستان ایک خاص طریقے سے چلتا آیا ہے، جس میں خاص طبقات قوانین سے کھیل کر منافع خوری کرتے آئے ہیں۔ ان کے بقول اس دفعہ وزیراعظم آٹے اور چینی پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں اور ہر ہفتے ایک اجلاس بلایا جاتا ہے،ہم نے چونکہ ایک مختلف انداز اختیار کیا ہے اس لیے یہ عناصر اس کا ردعمل دیتے رہیں گے۔ گندم کی قیمت کا تعین طلب رسد پر ہوتا ہے لیکن بیچ میں اسمگلنگ سمیت دیگر عناصر بھی آ جاتے ہیں۔