بدین:بجلی کی بد ترین لوڈشیڈنگ ،حیدرآباد روڈ پر دھرنا ،پولیس سے جھڑپیں،2 زخمی

65
بدین میں لوڈشیڈنگ کے خلاف مشتعل شہری جلائو گھیرائو کررہے ہیں جبکہ پولیس اہلکار مظاہرین سے مذاکرات کررہے ہیں

بدین(نمائندہ جسارت)بدین بجلی کی طویل اعلانیہ اور غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ خراب ٹرانسفارمر کی مرمت نہ کرانے کے خلاف حیدرآدباد روڈ پر طویل دھرنا‘ ٹریفک جام مظاہرین اور پولیس میں جھڑپیں ‘لاٹھی چارج اور پتھراؤ سے2 مظاہرین زخمی ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق طویل بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور سخت گرمی کے ستائے شہری سڑکوں پر نکل آئے اتفاق کالونی کے مکینوں نے مین حیدرآباد روڈ پر ٹائر جلا کر احتجاج کیا اور دھرنا دے کر روڈ بلاک کر دیا احتجاج کہ باعث شام چار بجے سے رات تک قومی شاہراہ ٹریفک معطل رہی مسلسل روڈ بلاک اور ٹریفک بند ہونے سے مسافروں کو
سخت مشکلات اور پریشانی کا سامنا کرنا پڑا مسافروں اور مظاہرین میں تلخ کلامی اور جھڑپ بھی ہوئی مظاہرین نے ایک گاڑی اور ایک موٹرسائیکل پر پتھراؤ کر کے نقصان بھی پہنچایا پولیس نے دو بار احتجاج ختم کرانے اور ٹریفک بحال کرانے کی کوشش کی جس میں وہ ناکام رہی مظاہرین کا مطالبہ تھا جب تک ٹرانسفارمر نہیں لگتا اور بجلی بحال نہیں ہوتی دھرنا اور احتجاج ختم نہیں کریں گے مظاہرین اور پولیس میں ہونے والی جھڑپ میں پولیس نے مظاہرین پر لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا۔ مظاہرین کے مطابق گزشتہ کئی روز سے ٹرانسفارمر خراب ہونے کہ باعث پورے محلہ کی بجلی بند ہے ۔ذرائع کے مطابق مذکورہ ٹرانسفارمر پر چند میٹر کنکشن ہیں جبکہ سیکڑوں غیرقانونی کنکشن سے بجلی چوری کی جاتی ہے کنڈا مافیا اور بجلی چوری کہ باعث ٹرانسفارمر بار بار خراب ہوجاتے ہیں ۔ رات گئے مظاہرین ‘پولیس اور حیسکو حکام میں ہونے والے مذاکرات اور صبح تک بجلی کی بحالی کی یقین دہانی کے بعد مظاہرین نے احتجاج اور دھرنا ختم کردیا