چیک پوسٹ حملہ: حکومت کا پی ٹی ایم رہنماؤں کیخلاف کیس واپس لینے کا فیصلہ

110

پشاور (آئی این پی) خیبر پختونخوا حکومت نے پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے رہنمائوں کے خلاف دائر کیس واپس لینے کا فیصلہ کرلیا۔ کے پی حکومت نے کیس واپس لینے کے لیے عدالت میں درخواست جمع کرا دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صوبائی حکومت موجودہ صورتحال کے تناظر میں کیس واپس لینا چاہتی ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق صوبائی حکومت نے فیصلہ قومی مفاد کے تحت کیا ہے۔ دوسری جانب پی ٹی ایم رہنمائوں کے وکیل عبدالطیف آفریدی نے نجی ٹی وی سے گفتگو میں حکومت کی جانب سے درخواست دائر کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے کیس واپس لینے کے لیے عدالت میں درخواست دائرکی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ استغاثہ کی درخواست جمع ہونے کے بعد کیس خود بخود ختم ہوجاتا ہے۔ خیال رہے کہ خیبر پختونخوا کے ضلع شمالی وزیرستان میں خڑ کمر چیک پوسٹ پر حملے کا واقعہ26 فروری 2019ء کو پیش آیا تھا۔ جس میں 13افراد جاں بحق اور کئی زخمی ہوئے تھے جب کہ زخمیوں میں5 سیکورٹی اہلکار بھی شامل تھے۔ سی ٹی ڈی نے پی ٹی ایم رہنما محسن داوڑ اور علی وزیر سمیت دیگر کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔ پی ٹی ایم رہنمائوں کے خلاف کیس بنوں میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیر سماعت ہے جہاں اب کیس کی سماعت 16جولائی کو ہوگی۔