آیا صوفیہ میں پہلی نماز 24 جولائی کو ادا کی جائے گی

619

استنبول: ترک صدر رجب طیب اردوان نے گزشتہ روز اعلان کیا ہے کہ تاریخی عالمی ثقافتی ورثہ آیا صوفیہ میں 24 جولائی کو پہلی نمازادا کی جائے گی۔

ترک میڈیا کے مطابق صدر طیب اردوان نے نے آیا صوفیہ کو مسجد میں تبدیل کرنے  کیلئے اپنا خود مختار حق استعمال کیا،اردوان نے مغرب کو خبردار کیا کہ آیا صوفیہ کے اقدام پر تنقید ہماری آزادی پر حملہ تصور ہو گی۔

قبل ازیں امریکا، فرانس سمیت اقوام متحدہ نے ترکی سے اپیل کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‘وہ اس کی حیثیت تبدیل نہ کرے’۔

Hagia Sophia: Erdogan signs order to convert museum into mosque ...

غیر ملکی میڈیا کا کہناہے کہ عدالتی فیصلے کے بعد جیسے ہی طیب اردوان نے صدارتی حکم نامے پر دستخط کیے تو ترک قوم کی بڑی تعداد  نے دیوانہ وارآیا صوفیہ کے باہر اکھٹی ہوگئی اور ترک صدر کے حق میں نعرے بازی کی۔

عالمی خبررساں ایجنسی کے مطابق آیا صوفیہ کے باہر ہزاروں کی تعداد میں موجود مرد و خواتین نے نماز کی ادائیگی بھی کی۔

آیا صوفیہ کے باہر باجمات نماز کی ادائیگی کے بعد ترک شہریوں نے ملکی اور غیر ملکی میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ پہلی نمازکی ادائیگی کے بعد فخرمحسوس کررہے ہیں جبکہ ایک شہری کا کہنا تھا کہ یہ کام بہت پہلے ہو جاناچاہیے تھا۔

ترک میڈیا سے شہری نے اپنے جذبات بیان کرتے ہوئے کہا کہ آیا صوفیہ کے سامنے نماز کی ادائیگی ایک حیرت انگیز احساس ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ ایسا محسوس ہوا کہ جیسے استنبول دوبارہ فتح ہوا ہے۔