پہلے کچرا پھر نالے،میئر کراچی کی نئی منطق

85
قیوم آباد کا کچرے سے بھرا ہوانالہ متعلقہ اداروں کی توجہ کا طالب ہے

کراچی(صباح نیوز)میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا ہے کہ طوفانی بارشیں مزید ہوتی ہیں تو صورتحال سنگین ہوسکتی ہے، حالات کنٹرول کا دعویٰ نہیں کیا جو وزیر بلدیات نے بتایا اس سے عوام کو آگاہ کیا۔میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا ہے کہ جب تک کچرے کا ڈسپوزل نہیں ہوگا نالوں میں کچرا آتا رہے گا، انجینئرز لگادیں یا اربوں کھربوں روپے خرچ کردیں صفائی نہیں ہوسکے گی۔وسیم اختر نے کہا کہ پہلے کچرے کے ڈسپوزل کو بہتر بنانا ہوگا، سندھ اور وفاق کو بتایا کہ بارشوں سے پہلے نالے صاف کرلیں۔میئر کراچی نے کہا کہ ورلڈ بینک کے تعاون سے بڑے 38 نالوں کی صفائی جاری ہے، کے ایم سی کے پاس مشینیں اور وسائل نہیں ہیں۔کے ایم سی کے 12 میں سے 9 پانی کے پمپس خراب ہیں،ان کی مرمت کرائی جارہی ہے۔واضح رہے کہ کراچی میں مون سون کی پہلی بارش کے دوران مختلف حادثات میں 5 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔
قیوم آباد کا کچرے سے بھرا ہوانالہ متعلقہ اداروں کی توجہ کا طالب ہے