ساری زندگی تھوک سے گیند چمکانے والوں کو اب بدلنا ہوگا،وقار یونس

90

ووسٹر(جسارت نیوز)قومی ٹیم کے بولنگ کوچ وقار یونس نے امید ظاہر کی ہے کہ انگلینڈ کے خلاف سیریز میں قومی کرکٹرز بہترین تیاری کے ساتھ میدان میں اتر کر زبردست پرفارمنس دیں گے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم ان دنوں انگلینڈ کے شہر ووسٹر میں قیام پزیر ہے جہاں وہ بائیو سیکور ماحول میں رہتے ہوئے انگلینڈ کے خلاف سیریز کی تیاریوں میں مصروف ہے۔ ٹریننگ سیشنز کے دوران پاکستان ٹیم دو انٹرا اسکواڈ پریکٹس میچز بھی کھیلے گی۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ وقار یونس نے آسٹریلیا سے انگلینڈ پہنچ کر ٹیم کو جوائن کیا۔ وقار یونس پی ایس ایل ملتوی ہونے کے بعد لاہور سے سڈنی چلے گئے تھے اور فلائٹ آپریشن معطل ہونے کی وجہ سے وقار یونس پاکستان نہیں آ سکے تھے۔وقار یونس کا کہنا ہے کہ ووسٹر میں جونہی کرکٹرز کے کویڈ 19ٹیسٹ منفی آئے سب کرکٹرز نے فوری طور پر ٹریننگ کا آغاز کر دیا کیونکہ تین ساڑھے تین ماہ سے گرائونڈ میں نہیں جا سکے تھے۔ وقار یونس نے کہا کہ سب سے اچھی بات یہ ہے کہ کھلاڑی بڑی بہتر حالت میں ہیں اور انہوں نے خود کو فٹ رکھا ہوا ہے، اگرچہ وہ کھلاڑیوں سے مل نہیں سکتے تھے لیکن مختلف طریقوں سے کھلاڑیوں سے رابطہ رکھا اور ان کی رہنمائی جاری رکھی۔ انہوں نے کہا کہ پہلی امید تو یہی ہے کہ کووڈ 19ختم ہو گا اور صورتحال نارمل ہو جائے گی ،ساری زندگی تھوک سے گیند چمکاتے رہے، اب خود کو تبدیل کرنا ہو گا۔ وقت کی ضرورت ہے،لیکن اگر وائرس لمبا چلا تو ہو سکتا ہے کہ آئی سی سی کو گیند چمکانے کے لیے کوئی اور طریقہ بھی تلاش کرنا پڑے۔ کوویڈ 19 سے کرکٹ کوجھٹکا لگا ہے جب کہ دیگر کھیلوں کوبھی نقصان پہنچا ہے۔وقار یونس کے مطابق نئی پلئینگ کنڈیشنز میں عادتوں کو تبدیل کرنے میں وقت لگے گا۔