پیوٹن 2036 تک کیلیے روس کے صدر منتخب

330

ولادی میر پیوٹن 2036تک کے لیے روس کے صدر منتخب ہوگئے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ولادی میرپیوٹن نے صدارت کو طول دینے کے لیے آئینی ترمیم کی تجویز دی تھی جس پر ریفرنڈم  کروایا گیا۔

الیکشن کمیشن نے ریفرنڈم کےابتدائی نتائج جاری کردیے ہیں جس کے مطابق   77 فیصد سے زائد لوگوں نے آئینی ترمیم کے حق میں ووٹ دیے جب کہ 21 فیصد نے مخالفت میں رائے دی۔

ریفرنڈم میں عوامی تائید حاصل ہونے کے بعد 20 سال سے زائد عرصہ ملک کی قیادت سنبھالنے والے روسی صدر ولادی میر پیوٹن کو  آئندہ 12 سال کے لیے صدرارت پر براجمان رہنے کا آئینی جواز مل گیا ہے۔

روسی صدر کی مدت صدارت 2024 میں ختم ہورہی ہے تاہم آئینی ترمیم  نے انہیں مزید 12 سال یعنی 2036 تک ملک کا صدر رہنے کا حق دے دیا ہے، اس کا مطلب یہ ہے کہ 67 سالہ پیوٹن 83 سال کی عمر تک صدارت کے عہدے پر فائض رہیں گے۔