ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی بیٹی نے شادی کرلی  

873

تہران: ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی بیٹی زینب سلیمانی نے لبنان میں حزب اللہ کے ایگزیکٹو کونسل چیئرمین کے بیٹے سے شادی کرلی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی افواج کے ڈرون حملے میں مارے جانے والے القدس بریگیڈ کے ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کی بیٹی زینب سلیمانی نے رضاصفی الدین سے شادی کرلی، یہ خبر سب سے پہلے لبنان میں حزب اللہ کے مشہور فوجی کمانڈر عماد مغنیہ کی بہن، زینب مغنیہ کے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر شائع ہوئی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق زینب سلیمانی کو سید حسن نصراللہ کے بعد لبنانی حزب اللہ کے سب سے بااثر عہدیدار ہاشم صفی الدین کی بہو کہا جا رہا ہے، ان کی شادی ہاشم صفی الدین کے بیٹے رضا صفی الدین سے ہوئی ہے۔

Media Tweets by zeinab soleimani (@ZeynabSoleimani) | Twitter
ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی بیٹی زینب سلیمانی

واضح رہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کو امریکی فوج نے بغداد ایئرپورٹ کےقریب 4 جنوری 2020 کو ہلاک کیا تھا۔

دوسری جانب زینب سلیمانی میڈیا کی سب سے نمایاں شخصیت رہیں اور سلیمانی خاندان کی جانب سے انہوں نے حسن نصراللہ سے ملاقات بھی کی تھی، انقلابی محافظوں کے آفوگ نیٹ ورک پر قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد جاری ہونے والے دستاویزات میں کہا گیا ہے کہ زینب سلیمانی عراق ، لبنان اور شام میں آپریشنل علاقوں میں قدس فورس کے کمانڈر کے متعدد خفیہ دوروں میں ملوث رہی ہیں۔

زینب سلیمانی کی عمر 28 سال ہے، وہ لبنانی لہجے میں عربی بولتی ہیں اور تعلیم میں ہیومینٹیز کی ڈگری ان کے پاس ہے۔ انگریزی میں ان کی روانی عمدہ ہے۔

قاسم سلیمانی نے انہیں ایک انٹرویو میں “گوریلا” کا خطاب دیا تھا کیوں کہ وہ اپنے والد کے ساتھ تمام فوجی اور سیاسی دوروں پر جانے کی خواہشمند ہوا کرتی تھیں۔