اسرائیل فلسطینی اراضی ہتھیانے سے باز رہے، سعودی عرب

276

ریاض : سعودی عرب نے  فلسطین کے مغربی کنارے (غرب اردن) کو ہتھیانے کی صہیونی کوشش اور ان پر اسرائیلی خود مختاری کے قیام اعلان کی شدید الفاظ میں مذمت کردی۔

سعودی عرب کا کہنا ہے کہ مغربی کنارے  اور وادی اردن کو اسرائیل میں الحاق عالمی قانون اور اس حوالے سے سلامتی کونسل کی منظور کی گئی قراردادوں کی کھلی کی خلاف ورزی ہوگی۔اسرائیل کے اس اقدام سے خطے میں دیر پا امن کے قیام کے راستے بندہوجائیں گے۔

The Naksa: How Israel occupied the whole of Palestine in 1967 ...

عرب میڈیا کے مطابق مشرق وسطیٰ اور مسئلہ فلسطین سے متعلق سلامتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سعودی عرب کے اقوام متحدہ میں نائب مندوب ڈاکٹر خالد بن محمد المنزلاوی نے اسرائیل کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ مغربی کنارے اور وادی اردن سمیت دیگر فلسطینی علاقوں پر صہیونی خود مختاری کےقیام سے باز آنا چاہیے۔

مزید پڑھئیے: “اسرائیل فلسطین کے مقبوضہ علاقے خالی کرے”

اقوام متحدہ کے نائب مندوب نے اپنے خطاب میں کہا کہ دنیا  2 دن بعد اقوام متحدہ کے عالمی سلامتی اور امن سے متعلق معاہدے کے 75 سال پورے ہونے کی سالگرہ منارہی ہے، تو دوسری طرف اسرائیل اشتعال انگیزی توسیع پسندانہ اقدامات کو فروغ دے رہا ہے۔ فلسطینی اراضی کا اسرائیل سے الحاق چاروں جنیوا معاہدوں، عالمی قراردادوں اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

سعودی عرب کے نائب مندوب نے فلسطینی علاقوں پر اسرائیل کی طرف سے یہودی کالونیوں کے قیام اور آباد کاری جاری رکھنے کے اقدامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی ریاست کی توسیع پسندانہ سرگرمیوں کے نتیجے میں خطے میں کشیدگی اور تشدد کی نئی لہر اٹھ سکتی جست روکنا ناممکن ہوگا ۔

Thousands of Palestinians protest against Israeli annexation plan ...

سن1967کی جنگ میں قبضے میں لیے گئے علاقوں اور القدس پرمشتمل آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ سنہ 2002ء میں عرب ممالک کی طرف سے فلسطین ۔ اسرائیل تنازع کے حل کے لیے پیش کردہ عرب امن فارمولا مسئلہ فلسطین کا بہتر اور مناسب حل ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیلی حکومت نے یکم جولائی سے مغربی کنارے ، وادی اردن اور بحر مردار سمیت فلسطین کے کئی علاقوں کو اپنی خود مختاری میں لانے کا اعلان کیا ہے۔ عالمی برادری کی طرف سے اسرائیل کے توسیع پسندانہ اقدامات کی سخت مخالفت کی جا رہی ہے تاہم صہیونی ریاست فلسطینی اراضی غصب کرنے کی سازش پرقائم ہے۔