وائٹ ہاؤس کے سابق مشیر کی کتاب سے امریکی حکام خوف ذدہ

391

واشنگٹن: امریکی محکمہ انصاف کے ڈپٹی اٹارنی جنرل نے امریکا کے سابق مشیر قومی سلامتی جان بولٹن کے خلاف درخواست دائر کردی۔

غیر ملکی نیوز ایجنسی کے مطابق ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت سے استدعا کی جان بولٹن کی کتاب میں حکومتی حساس معاملات کو منظر عام پر لایا گیا ہے اس لیے کتاب کی اشاعت کو فوری طور پر رکوایا جائے۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ جان بولٹن اپنے پبلشر اور ڈسٹری بیوٹرز سے رابطہ کر کے کتاب کی اشاعت رکوائیں۔ جان بولٹن نے حساس معلومات شائع نہ کرنے کا معاہدہ کیا تھا۔

 جان بولٹن کے وکیل نے عدالت میں اپنا مؤقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ کتاب کے حوالے سے معاہدے کی پاسداری کی گئی ہے جبکہ کتاب میں حساس معلومات نہیں ہیں جن سے ملکی کی ساکھ کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہو۔ اس لیے کتاب کی اشاعت کے خلاف محکمہ انصاف کی درخواست رد کی جائے۔

جج روئس لیم برتھ کا دونوں فریق کے موقف سننے کے بعد کہنا تھا کہ کتاب کی اشاعت رکوانے کے لیے کافی دیر ہوچکی ہے۔ کتاب کی اشاعت رکوانا اب بہت مشکل ہے۔

واضح رہے کہ امریکی محکمہ انصاف کے مطابق کتاب میں متعدد حساس تفاصیل درج ہیں جو امریکی قومی سلامتی کے لیے نقصان دہ ہو سکتی ہیں۔