باپ نے 3 ماہ کی بیٹی کو عمارت سے نیچے پھینک دیا

361

نئی دہلی: 30 سالہ نائجیرین نژاد بھارتی شہری اوزیوما ڈیکلین نے اپنی بیٹی کے رونے کی آواز سے سخت جھنجھلا کر بیٹی کو زمین پر پٹخ دیا اور دو منزلہ عمارت سے نیچے پھینک دیا۔

غیر ملکی نیوز ایجنسی کے مطابق اوزیوما سیلونز اور بیوٹی پارلرز سے وگ بنانے والی نائجیرین کمپنیز کیلئے بال اکٹھے کرتا تھا اور انہیں فروخت کرتا تھا تاہم کوروناوائرس وبا کے باعث لاک ڈاؤن کے دوران کاروبار بند ہونے کی وجہ سے اوزیوما معاشی حالات سے تنگ آکر زہنی دباؤ کا شکار رہنے لگا تھا۔

ملزم کی اہلیہ جولی نے پولیس کو بتایا کہ جب سے اس کا شوہر معاشی پریشانی کا شکار تھا اس کا رویہ روز بروز خراب ہوتا جارہا تھا تاہم اسے اندازہ نہیں تھا کہ وہ اس قدر سفاک ثابت ہوگا کہ اپنی 3 ماہ کی بیٹی کو قتل کردے گا۔

اہلیہ نے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ کے اوزیوما اپنی بیٹی کے رونے کی آواز سے اٹھا اور سخت جھنجھلاہٹ کا شکار ہوگیا، اس نے پہلے بیٹی کو اٹھا کر فرش پر پٹخا، پھر دوبارہ اسے اٹھا کر دوسری منزل کی کھڑکی سے نیچے پھینک دیا۔

ملزم کی بیوی اور پڑوسیوں نے بچی کو فوری طور پر قریبی اسپتال پہنچایا جہاں اسے مردہ قرار دے دیا گیا۔

پولیس نے ملزم پر قتل کی مقدمہ درج کردیا ہے جبکہ نائجیریا کے سفارتخانے کو بھی معاملے سے آگاہ کردیا گیا ہے۔