عمران خان اپوزیشن کے اعصاب پر سوار  ہیں،اسد عمر

362

وفاقی وزیربرائے منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ عمران خان اپوزیشن کے اعصاب پر سوار ہیں، کیا دیگر ممالک میں بھی کورونا عمران خان کی وجہ سے آیا ہے۔

 قومی اسمبلی  کے  بجٹ اجلاس میں لیگی رہنما خواجہ محمد آصف کی تقریر کے جواب میں اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر منصوبہ بندی نے کہا کہ خواجہ آصف کی دعا بڑی خطرناک ہوتی ہے، مجھے ڈر ہے کہ (ن)لیگ کو آئندہ انتخابات میں کوئی سیٹ ہی نہ ملے۔

 انہوں نے جب کینسر ہسپتال کیخلاف تقریر کی تو اس سال ریکارڈ چندہ ملا تھا،انہوں نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ ایک ارب پتی لندن میں ہمیں کافی پیتے ہوئے نظر آتے ہیں، انہیں واپس آنا چاہیے،خواجہ اصف نے انھیں پھنسا دیا،

انہوں نے کہا کہ میرا تو ای سی ایل سے اعتماد ہی اٹھ گیا ہے، اگر جعلی رپورٹس دکھا کر فرار ہوا جا سکتا ہے تو اس کا کیا فائدہ؟ ۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ عمران خان پاکستانی عوام کی طاقت کے ذریعے اقتدار تک پہنچے،یہی لوگ کہتے تھے کہ وہ کرکٹر ہیں، ان کو سیاست کا کیا پتا؟ اس سے قبل 2013 میں تحریک انصاف نے خیبر پختونخوا میں حکومت بنائی،پانچ سال یہی سنتے تھے کہ پرویز خٹک ناکام ہوئے لیکن اس کے بعد ہمیں وہاں دوبارہ اقتدار ملا۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن اپنے اعمال کا خود جواب دے، عمران خان کے پیچھے چھپنے کی کوشش نہ کرے،شہباز شریف کے نوکروں کے اکاؤنٹس میں سے اربوں روپے نکلے،نیب قوانین آپ نے بنائے اور چیئرمین نیب کو بھی آپ لوگوں نے نامزد کیا تھا، قانون آپ کا بنایا ہوا، نافذ کرنے والا آپ کا تعینات کردہ لیکن الزام پی ٹی آئی پر لگاتے ہیں۔

پاکستان میں کورونا کی صورتحال اور حکومتی اقدامات پر اپوزیشن کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ مکمل لاک ڈان کی پالیسی دنیا میں ناکام ہوئی،امیر ترین ممالک بھی زیادہ دیر تک لاک ڈاؤن برداشت نہیں کر سکے۔

امریکا میں موجودہ صورتحال کی وجہ سے 4کروڑ لوگ بے روزگار ہوئے،کورونا کے وجہ سے برطانیہ کی معیشت 20فیصد گر چکی ہے،بھارت میں 65فیصد لوگ غربت کی لکیر سے نیچے چلے گئے، بھارت نے مکمل لاک ڈاؤن کیا، پھر وہاں کورونا کیوں ختم نہیں ہوا؟۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اپوزیشن کے اعصاب پر ہمیشہ سے سوار رہتے ہیں،خواجہ آصف کی تقریر سے ایسا لگا جیسے کورونا عمران خان کی وجہ سے آیا،کیا دیگر ممالک میں بھی کورونا عمران خان کی وجہ سے آیا؟،کورونا وبا 180سے زیادہ ممالک میں پھیلی ہوئی ہے، ان ممالک میں پی ٹی آئی کی حکومت نہیں ہے۔