پچیس ایئر ٹکٹس،ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہوں اور الاؤنسز کا ترمیمی بل

444

سینیٹ میں ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہوں اور الاؤنسز میں ترمیم کا بل پیش کر دیا گیا۔

مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کی جانب سے پیش کیے گئے ترمیمی بل کے مطابق  ممبران پارلیمنٹ کو 25 بزنس کلاس ائیر ٹکٹس کے برابرمالیت کے ووچرز دیے جائیں گے، پہلے ممبران کو 25 بزنس کلاس اوپن ریٹرن ٹکٹ دیے جاتے تھے۔

ترمیمی بل میں کہا گیا ہے کہ سال 2019/20 کیلیے غیر استعمال شدہ ٹکٹس اور ووچرز 30 جون 2020 تک قابل قبول ہوں گے، ارکان پارلیمنٹ کا اسلام آباد سفر کیلیے ہر سال 25 بزنس کلاس اوپن ریٹرن ٹکٹ  کے مستحق ہیں۔

ترمیمی بل میں کہا گیا ہے کہ  ارکان کا مطالبہ تھا کہ 25 ٹکٹس کے استعمال کا حق انکے خاندان کے افراد کو بھی  دیا جائے، پچیس ائیر ٹکٹس کی جگہ برابر  مالیت کے 2  ووچرز ارکان کو دینے کی تجویز ہے، یہ ووچرز ارکان پارلیمنٹ کے خاندان کے ارکان بھی استعمال کر سکیں گے۔