سمندری شکار پرپابندی ختم‘ ماہی گیروں کو ریلیف فراہم کرنے کا فیصلہ

59

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے طوفان اور جاری کوروناوائرس صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے ماہ جون 2020ء میں ماہی گیری پر پابندی ختم کرکے ماہی گیروں کو ریلیف فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے یہ فیصلہ پیپلز پارٹی کے ایم این اے قادر پٹیل سے ملاقات میں کیا جنہوں نے یہاں وزیر اعلیٰ ہاؤس میں ان سے ملاقات کی۔ ایم این اے قادر پٹیل نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ ماہی گیر طوفان، تیز جوار اور جاری کورونا وائرس صورتحال کے باعث گزشتہ8 سے 10مہینوں سے بہت نقصان اٹھا چکے ہیں اور اب ماہی گیری پر پابندی کے 2ماہ ہوچکے ہیں، ایسی صورتحال میں ماہی گیر اپنا گزربسر نہیں کرسکیں گے۔ واضح رہے کہ پابندی کی وجہ سے ماہی گیر گزشتہ کئی مہینوں سے کام پر نہیں جارہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ وہ اس صورتحال سے بخوبی واقف ہیں لہٰذا وہ ماہی گیروں کو ریلیف فراہم کریں گے۔ انہوں نے سیکرٹری فشریز کو ہدایت کی کہ وہ ماہ جون میں ماہی گیری پر عائد پابندی کو ختم کرنے کے لیے ایک سمری پیش کریں تاکہ لاک ڈائون کو روکنے کے ساتھ ماہی گیر اپنے فشریز کا کام دوبارہ شروع کرسکیں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ انہوں نے ہمیشہ ماہی گیروں کے مفاد کو ترجیحی بنیاد پر تحفظ فراہم کیا۔ ماہی گیروں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔