حکومت اور لال مسجد انتظامیہ کے درمیان تنازع حل

100

اسلام آباد (آئی این پی )حکومت اور لال مسجد انتظامیہ کے درمیان تنازع حل ہوگیا۔ لال مسجد کے اردگرد کئی ماہ سے بند راستے کھول دیے گئے۔ مولانا عبدالعزیز اور ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات نے معاہدے پر دستخط کردیے، مولانا عبدالعزیز3 روز میں لال مسجد سے جامعہ حفصہ جی سیون منتقل ہوجائیں گے اور 2ماہ تک لال مسجد نہیں آسکیں گے۔ جامعہ حفصہ کو ایچ الیون میں دیے گئے پلاٹ کا تنازع 2ماہ میں حل کرلیا جائے گا، لال مسجد کا کنٹرول مولانا عبدالرشید غازی کے بیٹے ہارون الرشید غازی اور مفتیان عظام کے پاس رہے گا، مولانا عبدالعزیز 2 ماہ بعد ملک بھر میں دورے کرسکیں گے۔جامعہ حفصہ ایچ الیون کے پلاٹ پر2ماہ کسی فریق کا قبضہ نہیں رہے گا، پلاٹ پر جامعہ حفصہ اور حکومت کا ایک ایک چوکیدار ڈیوٹی دے گا، پلاٹ کے گیٹ پر تالہ جامعہ حفصہ کا لگے گا۔ تحریری معاہدہ خفیہ رکھا جائے گا۔