کراچی میں روزگار کو جان بوجھ کے تباہ کیا جا رہا ہے

65

ہزاروں لوگوں کا روزگار خطرے میں کورنگی انڈسٹریل ایریا میں نان آسٹریٹ ایکٹر عناصر انڈسٹری میں بدمعاشیاں عروج پہ پولیس اور ادارے بے بس نظر آتے ہیں ڈینم کلاتھنگ میں ہونے والے واقعہ میں مْلوث افراد کی گرفتاری اور رہائی یہ ثابت کرتی ہے کراچی میں روزگار کو جان بوجھ کے تباہ کیا جا رہا ہے ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر ڈینم کلاتھنگ کمپنی اور کنونینر پاکستان تحفظ قومی موومنٹ طارق محمود نے کیا مزید انہوں نے کہاں ہم پاکستان میں سترہویں نمبر پہ ٹیکس دیتے ہیں اگر حکومت ہمیں تحفظ نھیں فراہم کرتی تو ہمیں سوچنا یڑے گا روزگار کی جگہ کوء رنگ نسل زبان نھیں ہوتی جو لوگ اپنی لیڈریاں چمکانا چاہتے ہیں انہیں چاہیے وہ بلا رنگ اور نسل بات کیا کریں ہمارا مْلک اسوقت کسی لسانیت اور صوبائیت کا متحمل نھیں ہو سکتا ان حالات میں انفرادی سوچ کے بجائے اجتماء سوچ رکھیں انتیظامیہ روئیے کی مذمت کرتے ہیں کہ چند شرپسندوں کے سامنے بے بس نظر آتی ہے۔