ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل ایکسپورٹ سیکٹر تباہی کے دہانے پر ہے

66

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان ریڈی میڈ گارمنٹس مینوفیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز (پریگمیا)کے مرکزی چیئرمین شیخ شفیق جھوک والا اور چیئرمین (جنوبی زون)امیر امین کوٹھاوالا نے کہا ہے کہ تاریخ میں مسلسل بحران کے سبب ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل ایکسپورٹ سیکٹر تباہی کے دہانے پر پہنچ گیا ہے،پچھلے بجٹ میں سیلز ٹیکس لگانے کی وجہ سے پاکستان کی وجہ سے اربوں روپے مالیت کی لیکویڈیٹی حکومت سے پھنس گئی ہے، پچھلے سال وفاقی بجٹ میں حکومت نے ٹیکسٹائل کی گھریلو فروخت پر سیلز ٹیکس وصول کرنے کے مقصد سے برآمدات پر 17 فیصد سیلز ٹیکس عائد کیا تھا جس سے برآمدی صنعت پر مالی بوجھ پڑا تھا،برآمد کنندگان نے ایف بی آر کے محصولات کے اہداف کو کم کرنے اور مقامی فروخت سے سیلز ٹیکس وصول کرنے کے لئے برآمد کنندگان کو جرمانے نہ کرنے پر سخت احتجاج کیا۔انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر متعدد برانڈز کو دیوالیہ پن کا سامنا کرنا پڑا ہے اس وجہ سے برآمدی شعبے بھی COVID19 کی وجہ سے بری طرح سے متاثر ہوا ہے ۔