چین کی جانب سے بھیجے گئے امدادی سامان کا معاملہ سیاست کی نظر

263

کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے
چین سے بھیجے گئے سامان پر وفاقی حکومت اور سندھ حکومت میں اختلافات سامنے آگئے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے بھیجے گیا سامان معروف آن لائن کمپنی علی بابا کے بانی جیک ما کی جانب سے عطیہ کیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ٹوئٹر پر جیک ما اور چینی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس مشکل گھڑی میں سندھ حکومت کو 5 لاکھ ماسک بھجوانے اور ہمارے ساتھ کھڑے ہونے پر اہم اپنے دیرینہ دوستوں کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

دوسری جانب سندھ حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے اپنے ٹوئٹر بیان میں کہا کہ چین کی جانب سے سندھ حکومت کو سامان بھیجا گیا ہے لیکن وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے فیصلہ کیا ہے کہ چین سے ملنے والے 5 لاکھ این 95 لاکھ ماسک میں سے 2 لاکھ سندھ رکھے گا جب کہ باقی 3 لاکھ ماسک پنجاب، خیبر پختونخوا، بلوچستان، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان بھجوائے جائیں گے۔

تحریک انصاف کا ردعمل

پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کے رہنماؤں نے اس پر اپنے ردعمل کا اظہار کیا، اور سندھ حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت اس معاملے پر سیاست کررہی ہے ، یہ ماسک سندھ حکومت کے لیے نہیں بلکہ پورے پاکستان کے لیے آئے ہیں۔

‏تحریک انصاف کے رہنما اور سابق ترجمان وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ پیپلز پارٹی اس معاملے پر سیاست کررہی ہے، یہ لوگ میڈیا گڈوِل لینے میں کچھ آگے نکل گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ یہ پانچ لاکھ ماسک پورے پاکستان کے لیے آئے تھے، آپکا حصہ پچاس ہزار تھا، باقی سب کا بھی حصہ تھا۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے وفاقی حکومت سے دو لاکھ ماسک چاہیئے جس پر انہیں دے دیئے گئے لیکن اب پیپلز پارٹی اس پر سیاست کررہی ہے اور ایسا باور کروارہی ہے کہ جیسے چین کی جانب سے سندھ کیلئے ہی سامان بھیجا گیا تھا۔