قوم نے لاک ڈائون کردیا ، اب حکومت عوام کی ضروریات کا خیال رکھے ، لیاقت بلوچ

99

 

لاہور (نمائندہ جسارت)نائب امیر جماعت اسلامی اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ لاک ڈائون کا اعلان ہوگیا ہے عملدرآمد بھی شروع ہوگیا اب یہ حکومت اور ریاست کی ذمے داری ہے کہ عوام کی ضرورت ،جذبات ،احساسات کا خیال رکھا جائے ۔کورونا وبا سے نمٹنے اور نجات پانے کے لیے پوری قوم متحد ہے۔تمام دینی اور اپوزیشن جماعتوں نے دانش مندی اور قومی کردار کا مظاہرہ کیا ہے۔عوام حکومت کا ساتھ دے رہے ہیں اور ہر پابندی کے لیے تیار ہیں۔ ملک کی اولین ترجیح کورونا وبا سے نجات ہے۔لیکن حکومت خود اپنے متضاد اور تذبذب پر مبنی اقدامات سے قومی فکری اتحاد کو خراب کررہی ہے۔وزیراعظم ،وزرا ، پنجاب،خیبر پختونخوا،بلوچستان،سندھ کے وزرائے اعلیٰ سنجیدگی کا مظاہرہ اور سیاست بازی سے پرہیز کریں۔ وزیراعظم نے اپنے ضدی رویہ و اسلوب سے خود اپنے آپ کو دیوار سے لگایا ہے۔یہ نوشتہ دیوار ہے کہ لاک ڈائون کا فیصلہ ،اعلان اور عملدرآمد ریاست نے کرایا اور حکومت اپنی نااہلی سے سائیڈ
لائن ہوگئی ہے۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ ہاتھ ملانے سماجی رابطہ کم کرنے، بار بار ہاتھ دھونے کی احتیاطوں سے بھر پور آگہی ضرور کی جائے لیکن یہ وقت رجوع الی اللہ کا ہے۔اسلامیان پاکستان کو توبہ و استغفار اور پاکیزگی کا بھی پیغام دیا جائے۔ اسلامی جمہوریہ پاکستان کی حکومت پہ فرض ہے۔ اپنے لائحہ عمل سے قادر مطلق کی رحمت و کرم کو بے دخل نہ کیا جائے۔حکومت یقینی بنائے کہ عوام کو سہولتیں ملیں،بجلی ،پانی کی فراہمی یقینی رکھی جائے۔سود کی معیشت سے توبہ کی جائے ۔قومی قیادت کو متحد کرنا وزیراعظم عمران خان کا قومی فرض ہے۔بلا جواز،انا ضد اور ہٹ دھرمی سے پرہیز کریں۔