اثاثہ جات کیس: شوکت بسرا نیب کیخلاف لاہور ہائیکورٹ پہنچ گئے

90

لاہور (نمائندہ جسارت) تحریک انصاف کے رہنما شوکت بسرا نے قومی احتساب بیورو کیخلاف لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا، آمدن سے زائد اثاثوں کی تحقیقات کیلیے جے آئی ٹی بنانے کا مطالبہ، جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 2 ہفتوں میں جواب طلب کرلیا۔ دوران سماعت درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ ڈی جی نیب ملتان پر عدم اطمینان کا اظہار کرچکا ہوں، نیب ملتان نے مبینہ طور پر مجھے مدعی سے ملزم بنا دیا ہے، چیئرمین نیب کو درخواست دینے کے باوجود ڈی جی نیب ملتان نے مجھے طلب کیا نیب ملتان آمدن سے زائد اثاثہ جات میں مجھ سے انکوائری کر رہا ہے، مکمل اثاثے ریکارڈ پر موجود ہیں نیب ہراساں کر رہا ہے، عدالت نیب کو ہراساں کرنے سے روکے۔ چیئرمین نیب کو ڈی جی نیب کیخلاف درخواست دے رکھی ہے، چیئرمین نیب کو جی آئی ٹی بنانے کی درخواست کی تھی عدالت سے بھی یہی استدعا ہے، عدالت آئی ایس آئی، ایم آئی سمیت دیگر پر مشتمل جی آئی ٹی بنانے کا حکم دے۔ درخواست گزار نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ جی آئی ٹی بنے گی تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے گا اگر میرے اثاثے آمدن سے زیادہ ہوتے تو7 سال کرایے کے مکان میں رہائش نہ ہوتی۔