ن لیگ، پیپلزپارٹی کا ملک کو لاک ڈائون کرنے کا مطالبہ ‘بھیانک تنائج کی ذمے دار پی ٹی آئی حکومت ہوگی‘ شہبازشریف

531

کراچی،لاہور،اسلام آ باد،لندن(اسٹاف رپورٹر +آن لائن + صباح نیوز)پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی نے ملک کو لاک ڈائون کرنے کا مطالبہ کر د یا جب کہشہباز شریف نے کہا ہے کہ بھیانک تنائج کی ذمے دار پی ٹی آئی حکومت ہوگی۔ اپوزیشن لیڈرلندن سے پاکستان کے لیے روانہ ۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ اوروزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی جانب سے کورونا وائرس سے متعلق دی جانے والی بریفنگ کے دوران پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے سندھ میں کورونا کی بڑھتی ہوئی وبا کے پیش نظر لاک ڈائون کو کرونا وائرس پر قابو پانے کا واحد حل قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو مکمل لاک ڈائون کی جانب ہر صورت میں جانا ہوگا،مکمل لاک ڈائون میں ہر دن اور ہر گھنٹے کی تاخیر وبائی آفت سے مقابلے کو مشکل بنارہی ہے،ہم لاک ڈائون کرنے میں پہلے ہی تاخیر کا شکار ہیں،لاک ڈائون پہلے ہوجانا چاہیے تھا۔بلاول زرداری نے کہاکہ ہمیں جلد از جلد بحران میں کمی اوروبا پرقابو پانے کے لیے لاک ڈائون کا حتمی فیصلہ لینا ہوگا،کوئی صوبہ تن تنہا کورونا وائرس کے بحران کا مقابلہ نہیں کرسکتا، ہمیں لاک ڈائون کو قابل عمل بنانے کے لیے وفاقی حکومت کی پوری مدد چاہیے ،ہمیں لوگوں کے زیادہ سے زیادہ ٹیسٹ کرنے اور ضرورت مندوں کی مدد کے لیے وفاقی حکومت کی پوری مدد چاہیے۔بلاول زرداری نے کہاکہ جہاں ہم اچھے کے لیے پرامید ہیں، وہیں بدترین کے لیے بھی تیار ہیں اگر بدترین صورت حال پیش آئی تو ہمارا صحت کا نظام اتنی استطاعت نہیں رکھتا،ہمیں دوسرے ممالک کے تجربات سے سیکھنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ مسئلہ یہ نہیں ہے کہ ہم کیا کریں گے، مسئلہ یہ ہے کہ ہم کب کریں گے،جب تک حکومت لاک ڈان کے لیے تیار نہیں ہوجاتی، عوام اپنے گھروں پر رہیں،شہری خود کو اور دوسروں کو محفوظ رکھنے کے لیے گھروں پر رہیں۔ علاوہ ازیںپاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میںاپوزیشن لیڈر میاں محمد شہباز شریف نے ہفتے کو سوشل میڈیا پر جاری اپنے ایک بیان میںملکی معیشت اور کورونا کی یکساں بگڑتی صورتحال پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا اور معیشت کے لیے قومی سطح پر مناسب اقدامات کا عمل تیز کیا جائے۔ انہوں نے کورونا وائرس کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر حکومت سے ملک میں لاک ڈائون کرنے کا مطالبہ کیا۔ شہباز شریف نے کہا کہ حکومت فی الفور لاک ڈائون کی تیاریاں کرے، عوام کے لیے خوراک کی فراہمی اور دیگر انتظامات کو فوری حتمی شکل دی جائے، کورونا وائرس کی خراب ہوتی صورتحال میں عوام کی زندگی مزید خطرے میں نہیں ڈالی جاسکتی ، چین کی طرز پر پاکستان میں لاک ڈائون کرکے کورونا پر قابو پانے کے انتظامات کیے جائیں۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اقدامات کی تاخیر کی صورت میں بھیانک انسانی المیہ ناقابل قبول ہوگا، تاخیر سے ہونے والے کسی بھی نقصان کی ذمے دار پی ٹی آئی حکومت ہوگی۔دوسری جانب شہباز شریف آج اسلام آباد پہنچیں گے۔پاکستان مسلم لیگ (ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے تصدیق کی ہے کہ پارٹی صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کورونا وائرس کی صورت حال کے پیش نظر فوری طر پر وطن واپس آنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔مریم اورنگزیب نے اپنے بیان میں کہا کہ شہباز شریف نے آج رات ہی وطن واپس آنے کا فیصلہ کیا ہے اور وہ آج رات کو اسلام آباد پہنچیں گے۔سابق وزیراعظم نواز شریف کے علاج کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی سرجری اگلے ہفتے طے ہے لیکن شہباز شریف نے فیصلہ کیا کہ قوم کے درمیان ان کی موجودگی زیادہ ضروری ہے۔ترجمان مسلم لیگ (ن) نے مزید کہا کہ شہباز شریف ملک میں کورونا وائرس سے قوم کو بچانے اور دیگر کوششوں میں کردار ادا کریں گے۔ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات(ن)لیگ عطااللہ تارڑ نے کہا کہ پارٹی صدر سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے اور انہوں نے موجودہ ملکی حالات کو دیکھتے ہوئے اپنے بھائی کی علالت کے باوجود پاکستان اور اپنے عوام کی خاطر واپسی کا فیصلہ کیا ہے۔