نیب نے فواد حسن فواد کی ضمانت کو عدالت عظمی میں چیلنج کردیا

117

اسلام آباد (اے پی پی) آمدن سے زاید اثاثہ جات اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے کیس میں ملوث سابق وزیراعظم نواز شریف کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کی ضمانت بعد از گرفتاری سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کے 21 جنوری 2020کے فیصلے کو نیب نے عدالت عظمیٰ میں چیلنج کر دیا ہے۔ بدھ کو نیب کی جانب ایڈووکیٹ محمد شریف جنجوعہ نے عدالت عظمیٰ میں درخواست دائر کی۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے شواہد کو نظر انداز کرتے ہوئے فواد حسن فواد کو ضمانت دی،ہائیکورٹ نے فواد حسن فواد کیخلاف نیب کے پیش کردہ شواہد کا بھی درست جائزہ نہیں لیا جس کے باعث انصاف قائم نہیں رہ سکا۔ عدالت عظمیٰ فواد حسن فواد کی ضمانت بعد از گرفتاری سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے۔ واضح رہے کہ نیب نے 5 جولائی 2019ء کو فواد حسن فواد کو اختیارات کے ناجائز استعمال پر اور آمدن سے زاید اثاثہ جات کیس میں گرفتار کیا تھا۔