اسلامی حکومت کے قیام سے ہی مسائل حل ہوں گے ،امیر جماعت اسلامی بلوچستان

76

کوئٹہ(نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی بلوچستان مولانا عبدالحق ہاشمی نے کہاہے کہ جب تک بلوچستان کو دیانت دار دین دارقیادت نہیں ملے گی بدعنوان عناصر سے نجات نہیں ملے گی اس وقت تک تبدیلی نہیں آسکتی،بلوچستان کے عوام کو ترقی وخوشحالی کے سفر میں شامل کرنے کے لیے وفاق کیساتھ صوبائی حکمرانوں کو بھی غفلت ومفادات سے نکلنا ہوگا اوردیانت واخلاص سے قوم کاساتھ دیناہوگا ،جماعت اسلامی نے بدعنوان عناصر اور مہنگائی وبدامنی کے خلاف عوامی تحریک شروع کر رکھی ہے ،قوم مسائل کے حل ،لٹیروں سے نجات اور قومی دولت چوروں سے برآمد کرنے کے لیے ہماراساتھ دیں۔انہوں نے کہاکہ وفاق کیساتھ صوبائی حکومتوں میں شامل پارٹیوں نے بھی بلوچستان کے مظلوم عوام کا استحصال کیا ہے، بلوچستان کے عوام کا ولی وارث کوئی نہیں، صوبے کے وسائل استعمال کیے جارہے ہیں، وسائل سے مالامال بلوچستان کولوٹنے والوں کا کوئی احتساب نہیں ہورہا جس کی وجہ سے بدعنوانی کورکوانابھی ممکن نہیں رہا،جماعت اسلامی نے ملک بھر کی طرح بلوچستان میں بھی بدعنوانی ،بدامنی اور مہنگائی کے خلاف بھر پور عوامی مہم شروع کر رکھی ہے ان شااللہ ہم احتساب کے اداروں کو بھی جگائیں گے اور لوٹ مار کرنے والو ں کی راہ میں مشکلات پیداکرکے عدل وانصاف کی اسلامی حکومت کاقیام ممکن بنائیں گے،اسلامی حکومت قائم ہوگی تو عوامی مسائل حل اور عوام کی مشکلات وپریشانی میں کمی آسکے گی ،قوم جماعت اسلامی کی عوامی جدوجہد میں ساتھ دے تاکہ لوٹ مار کا راستہ روکاجاسکے،مہنگائی، بدامنی اوربدعنوانی نے مظلوم بلوچستان کے غریب وکم آمدنی والوں کو بہت زیادہ متاثر کیا ہے، بلوچستان کے عوام کو بھر پور ریلیف دینے کی ضرورت ہے تاکہ ان کی مشکلات وپریشانی کم ہوجائے ۔