بدترین مہنگائی‘ احتجاج کیلیے این ایل ایف کا جنرل کونسل اجلاس طلب

201

اسلام آباد ( نمائندہ جسارت ) نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان کے صدر شمس الرحمن سواتی نے کہا ہے کہ ملک میں بدترین مہنگائی نے عوام کا کچومر نکال دیا ہے،ملک میں ملازمین اور مزدور کے لیے جسم و جان کا رشتہ برقرار رکھنا محال ہوگیا ہے،موجود ہ مہنگائی کی بد تر ین صورتحا ل کے پیش نظر نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان نے ملک گیر جنرل کونسل کا 3 روز ہ اجلاس 28،29فروری اور یکم مارچ کو لاہور میں طلب کیا گیا ہے ،جس میں مہنگائی کے خلاف ہزاروں مزدورں کے اسلام آباد کی طرف مارچ کا فیصلہ کیا جا ئے گا ۔انہوں نے کہا کہ بدترین مہنگائی نے مزدور طبقے سے زندگی کا حق چھین لیا ہے‘ کم از کم تنخواہ ساڑھے 17 ہزار ہے جبکہ اس پر بھی عمل نہیں ہو رہا‘ جبکہ منڈی، بازار، تعمیرات، گھریلو، کھیت، بھٹہ، فشریز کا مزدور دہاڑی دار ہے جو اکثر بے روزگار رہتا ہے‘ مزدور جو پہلے ہی معاشی طور پر انتہائی پسماندہ ہیں، اس کے بچے تعلیم سے محروم ہیں، مریض علاج سے محروم ہیں،مزدور کی تنخواہ میں اضافہ 10%جبکہ مہنگائی میں اضافہ ہزار فیصد کیا گیا ہے۔انھوں نے کہا ملازمین کی تنخواہوں میں مہنگائی کے تناسب سے اضافہ کیا جائے اور دیہاڑی دار کروڑوں مزدوروں کے لیے بھی تنخواہ کا تعین بڑھتی ہوئی مہنگائی کے مطابق کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میںپر یس کانفر نس سے خطاب کر تے ہو ئے کیا۔ اس موقع پر نیشنل لیبر فیڈریشن پنجاب کے صدر راجہ عاشق خان ، این ایل ایف اسلام آباد کے صدرڈاکٹر تہذیب الحسن ، این ایل ایف راولپنڈی کے صدر ایوب خان ، ساجد عباس عباسی ، تنویر خان اور دیگر بھی موجود تھے۔ شمس الر حمن سواتی نے کہا اس وقت ملک میں پونے سات کروڑ مزدور فورس ہے۔ جو غربت کی لکیر سے نیچے زندگی بسر کر رہی ہے۔ تعلیم ، علاج سے محروم، سروں پر سائبان نہیں۔