مریم نواز کی بیرون ملک روانگی کا معاملہ اٹارنی جنرل عدالت طلب

170

لاہور (نمائندہ جسارت) لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ(ای سی ایل)سے نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کی درخواستوں پر اٹارنی جنرل پاکستان کو طلب کرلیا۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے مریم نواز کی درخواستوں پر سماعت کی۔ مریم نواز کی جانب سے امجد پرویز اور اعظم نذیر تارڑ ایڈووکیٹ پیش ہوئے جبکہ قومی احتساب بیورو کی طرف سے اسپیشل پراسیکوٹر سید فیصل رضا بخاری عدالت پیش ہوئے۔سماعت کے موقع پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل اشتیاق احمد خان بھی عدالت میں پیش ہوئے۔ دوران سماعت جسٹس علی باقر نجفی نے ریمارکس دیے کہ ہم چاہتے ہیں مریم نواز کے پاسپورٹ واپسی کے معاملے پر اٹارنی جنرل ہماری معاونت کریں۔اس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل اشتیاق احمد خان نے کہا کہ ویسے تو حکومت کا موقف آچکا ہے۔ اس پر بینچ کے سربراہ نے ریمارکس دیے کہ ہم چاہتے ہیں اٹارنی جنرل پاکستان عدالت کی معاونت کریں، اگر وہ خود نہیں آسکتے تو ہم آرڈر کر کے بلوا لیں گے۔ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ پنجاب حکومت نے نواز شریف کی 8ہفتوں کی توسیع کی درخواست مسترد کر دی ہے، جس کے بعد یہ درخواست بھی غیر موثر ہو جائے گی۔بعد ازاں عدالت نے مریم نواز کی درخواستوں پر کارروائی ایک ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔ سماعت کے موقع پر ن لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد عدالت کے باہر موجود تھی جو مریم نواز کے لیے دعائیں کرتے رہے۔