نوجوانوں کوآگے بڑھنے میں کامیاب جوان پروگرام مدد گار ثابت ہوگا، گورنرسندھ

366

کراچی(اسٹاف رپورٹر)گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ طالب علم ہمارا اثاثہ اور مستقبل ہیں ان کی صلاحیتوں کو سامنے لانا اور حوصلہ افزائی کرنا ملکی تعمیر و ترقی کے لئے اشد ضروری ہے کیونکہ ہمارے ملک میں نوجوان آبادی کا 60 فی صد کے قریب ہیں،

ان خیالات کا اظہار انہوں نے داؤد یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں نیشنل پروجیکٹ کمپٹیشن کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر فیض اللہ عباسی، داؤد فاؤنڈیشن کی چیف ایگزیکٹو آفیسر سبرینہ داؤد، فیکلٹی ممبرز، سابق اور موجودہ طالب علموں کی بڑی تعداد تقریب میں شریک تھی،اس مقابلہ میں ملک کی 35 جامعات اور تعلیمی ادارے شرکت کررہے ہیں جن کے 120 پروجیکٹس اس مقابلہ کا حصہ ہیں۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ فارغ التحصیل پروفیشنلز کی ایک بڑی تعداد بیرون ملک جاکر قسمت آزمانے کی خواہش رکھتی ہے کیونکہ ان کے ذہن میں پاکستان میں آگے بڑھنے کے مواقع نہ ہونے کا تصور موجود ہوتا ہے،

عمران اسماعیل نے کہا کہ پاکستان میں مواقعوں کی کمی کا تاثر بالکل درست نہیں خصوصاً وزیراعظم پاکستان عمران خان نے جب سے حکومت سنبھالی ہے نوجوانوں کی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے اور انہیں ان کی پسند کے شعبہ میں آگے بڑھنے کی ہر ممکن ہوضلہ افزائی کی جارہی ہے،جس کی نمایاں مثال وفاقی حکومت کا کامیاب جوان پروگرام ہے جس کے ذریعے انہیں ایک لاکھ سے 50 لاکھ تک قرضے دیئے جارہے ہیں۔ انہوں نے قومی پروجیکٹ مقابلہ میں شریک طالب علموں سے کہا کہ وہ اپنے آئیڈیاز کو مزید بہتر بنانے اور پروفیشنل طریقے سے آگے بڑھانے کے لئے وزیراعظم کے کامیاب جوان پروگرام سے بھرپور استفادہ کریں،

انہوں کہا کہ بڑے خواب دیکھنے میں کوئی ہرج نہیں لیکن صحیح وقت پر صحیح فیصلہ ضروری ہے کیونکہ مستقبل بہتر بنانے کے لئے ایسا کرنا ضروری ہے تاکہ بعد میں کسی قسم کا پچھتاوا نہ ہو۔ گورنر سندھ نے کہا کہ وائس چانسلر فیض اللہ عباسی، فیکلٹی اور طالب علموں کے باعث یہ جامعہ ایک نمایاں تعلیمی ادارہ بن کر اْبھر رہی ہے،

انہوں نے مزید کہا کہ تکنیکی تعلیم کے فروغ سے ہی ملک تعمیر و ترقی کی نئی منازل طے کرسکتا ہے۔ انہوں کہا کہ دا?د یونیورسٹی سے فارغ التحصیل پروفیشنلز کئی شعبوں میں نمایاں خدمات انجام دے رہے ہیں اور آج کی یہاں موجودگی اور اپنی جامعہ کی مدد لائق تحسین ہے،

وائس چانسلر پروفیسر فیض اللہ عباسی نے بتایا کہ اس مقابلہ کے انعقاد کا تمام تر کریڈٹ طالب علموں کو جاتا ہے جنہوں نے 6 ماہ تک شب و روز محنت کرکے اس مقابلہ کے انعقاد کو یقینی بنایا ہے،انہوں کہا کہ گزشتہ 7 سال میں جامعہ میں کئی نمایاں تبدیلیاں آئی ہیں۔ بعد ازاں گورنرسند ھ نے قومی پروجیکٹ مقابلہ کا باضابطہ افتتاح کیا اور مختلف جامعات کے اسٹالز پر جاکر ان کے پروجیکٹس کے بارے میں معلومات حاصل کیں،

دریں اثناء صحافیوں سے بات کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ کراچی سرکلر ریلوے کے بارے میں چیف جسٹس کے احکامات پر ہر ممکن عملدرآمد کیا جائے گا،

میئر کی ناراضگی کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر گورنر سندھ نے کہا کہ ایسی کوئی بات نہیں، بلدیہ عظمی کراچی کے منصوبوں کو حتمی شکل دی جارہی ہے اور جلد ان کا آغاز کیا جائے گا۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ مکمل شدہ منصوبوں کا وزیراعظم پاکستان عمران خان جلد افتتاح کریں گے۔