جماعت اسلامی آج سے مہنگائی کیخلاف ملک گیر تحریک شروع کررہی ہے

211

لاہور(نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ اصل اپوزیشن جماعت اسلامی ہے ،ہم آج سے مہنگائی اور بے روزگاری کے خلاف کراچی تا چترال تحریک شروع کر رہے ہیں ۔ اس تحریک میں پوری قوم یک زبان ہوگی ۔ عوام کا حکومت سے اعتماد اٹھ گیاہے ۔ ملک میں اپوزیشن نام کی کوئی چیز نہیں ، نام نہاد اپوزیشن ہر اہم موقع پر سرکار کی ہمنوا بن جاتی ہے ۔ اپوزیشن اپنے لیڈروں کی رہائی اور مقدمات کے خاتمے کا ایجنڈا لیے پھرتی ہے، اس لیے حکومت کی فرینڈلی اپوزیشن سے یہ امید نہیں کہ وہ عوامی مسائل کے حل کے لیے باہر نکلے گی ۔قوم نے باری باری سب پارٹیوں کو آزمالیا، اب ایک ہی آپشن ہے اور وہ جماعت اسلامی ہے ۔ اللہ کا عطا کردہ نظام ہی ملک کو بحرانوں سے نکال سکتاہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے منصورہ میں مرکزی تربیت گاہ کے شرکا سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر سابق پارلیمانی سیکرٹری صاحبزادہ طارق اللہ اور مرکزی سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی موجود تھے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ جو لوگ موجودہ حکمرانوں کو ووٹ دینا ثو اب سمجھتے تھے ، اب وہ انہیں اللہ کا عذاب سمجھ رہے ہیں ۔ حکومت پر سرمایہ کاری کرنے والے پیاروں کو نوازا جارہاہے ۔حکومت کمزور تر اور پیارے مضبوط ترین ہورہے ہیں ۔ وزیراعظم نے بھی پیاروں کو کلین چٹ دے دی ہے ۔ حکومت کہتی ہے ہم مافیا کا پیچھا کر رہے ہیں جبکہ قوم دیکھ رہی ہے کہ مافیاز نے حکومت کو آگے لگارکھاہے ۔ حکومت معاشی اور سماجی طور پر مکمل ناکام ہوچکی ہے ۔ مصنوعی آکسیجن پر اسے زیادہ دیر زندہ نہیں رکھا جاسکتا ۔ حکومتی گاڑی مختلف پرزوں کو اکٹھا کر کے بنائی گئی ہے جو ایک ہی جگہ کھڑی ہے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اپنی ذات کے عشق میں مبتلا حکمرانوں نے ملک و قوم کو مسائل کی دلدل میں دھکیل دیاہے ۔ اقتدار پر مسلط ظالم جاگیردار اور بے رحم سرمایہ دار عوام کا خون چوس رہے ہیں ۔ مہنگائی ، بے روزگاری ، غربت اور بدامنی نے لوگوں کی نیند حرام کردی ہے ۔ دنیا حیران ہے کہ بے پناہ قدرتی وسائل کے باوجود پاکستان کے عوام مہنگائی اور غربت کی چکی میں کیوں پس رہے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ اب قوم کے پاس جماعت اسلامی کے علاوہ دوسرا کوئی آپشن نہیں ۔ جماعت اسلامی ملک کی منظم ترین جمہوری اور دیانتدارجماعت ہے۔ ہمارے پاس معاشی نظام اور مسائل کے حل کا مکمل ایجنڈا ہے جبکہ حکومت کا کوئی وژن ہے نہ وہ منجدھار میں پھنسی کشتی کو کنارے لگا سکتی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہمارا ملک دنیا میں واحد ملک ہے جہاں ان پڑھ کو وزیر تعلیم اور گندم کے پودے کی شناخت نہ کر سکنے والے کو وزیر زراعت لگادیا جاتاہے یہی وجہ ہے کہ ملک میں آٹے چینی کا بحران پیداہوا ، حالانکہ پاکستان گندم اور گنا پیدا کرنے والے ملکوں میں پانچویں اور چھٹے نمبر پر ہے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کبڈی ورلڈ کپ جیتنے پر قومی ٹیم کے کپتان عرفان عرف مانا جٹ اور پوری ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہاکہ کبڈی روایتی کھیل ہے اس کی سرپرستی ہونی چاہیے۔