محبت یا حماقت ،بچوںنے ماں کی لاش تدفین کی بجائے 12 سال تک فریزر میں رکھی،

568

کراچی (اسٹاف رپورٹر) بیٹے اور بیٹی نے محبت میں ماں کی لاش کو دفنانے کی بہ جائے 12 سال تک اس کو فریزر میں رکھا۔تفصیلات کے مطابق گلشن اقبال بلاک 11 سے خاتون کی 12 سال پرانی لاش برآمد ہوئی ہے،

پولیس کا کہنا ہے کہ لاش کی شناخت ذکیہ خاتون کے نام سے ہوئی ہے۔معلوم ہوا ہے کہ خاتون کی لاش 10 سے 12 سال پرانی ہے اور صرف ڈھانچے کی صورت میں ہے، متوفی خاتون ذکیہ کے بیٹے اور بیٹی نے ماں کو مرنے کے بعد دفنایا نہیں، بلکہ فریزر میں رکھ لیا تاکہ وہ اپنی ماں کو جب چاہیں دیکھ سکیں۔ذکیہ خاتون کا ڈھانچا کپڑے میں لپیٹ کر اسپتال منتقل کیا جہاںسے ڈھانچے کو ضابطہ کی کاروائی کے بعد ایدھی سرد خانے رکھ وا دیا گیا ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جب ذکیہ کا بیٹا اور بیٹی بھی فوت ہوئے تو ان کے بھائی محبوب نے لاش کی دیکھ بھال شروع کی، گزشتہ رات محبوب نے ان کا ڈھانچا نکال کر کچرا کنڈی میں پھینک دیا، محبوب کا کہنا تھا کہ بیٹے اور بیٹی نے ماں کو محبت میں سنبھال کر رکھا تھا۔خاتون کے بھائی نے اپنے ابتدائی بیان میں کہا کہ ان کی بہن ذکیہ کی بیٹی شگفتہ 4 ماہ قبل انتقال کر گئی تھیں، وہ 2 دن پہلے بہن کے گھر گیا تو دیکھا کہ بہن کی لاش بستر پر پڑی ہے، ذکیہ کا ذہنی توازن بھی ٹھیک نہیں تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لاش کا پوسٹ مارٹم کرا لیا گیا ہے، جبکہ مذکورہ فلیٹ میں فرانزک ٹیسٹ کی غرض سے دروازے کا تالا توڑ کر سرچ کیا گیا تاکہ اصل حقائق بے نقاب ہوسکیں ، دوسری جانب متوفیہ کے بھائی محبوب کو حراست میں لے کر تفتیش کی جا رہی ہے، ذکیہ کا فلیٹ بچوں کے مرنے کے بعد کافی عرصہ خالی رہا۔