بلوچستان سے اغوا لڑکی سہراب گوٹھ سے باحفاظت بازیاب 3ملزمان گرفتار ،

225

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہر قائد کی پولیس نے بلوچستان پولیس کے ساتھ مشترکہ کارروائی میں مغوی لڑکی بازیاب کرا لی جبکہ ملوث3ملزمان کوبھی گرفتار کر لیاگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق سچل اور سہراب گوٹھ پولیس نے بلوچستان پولیس کے ساتھ کارروائی کرتے ہوئے مغویہ بازیاب کرالی جب کہ قتل، اغوا اور ڈکیتی میں ملوث 3 ملزمان کو گرفتار کر لیا۔پولیس کے مطابق بازیاب ہونے والی لڑکی کو اگست 2019 میں ڈیرہ مراد جمالی سے 3 ملزمان نے اغوا کیا تھا، ملزمان نے اغوا کی واردات کے دوران مزاحمت پر لڑکی کے باپ کو قتل کر دیا تھا۔

پولیس کے مطابق ملزمان لڑکی کو اغوا کر کے 6 ماہ قبل کراچی لے آئے تھے، ان ملزمان میں اسحاق خان، احسان خان اور محمد امین شامل ہیں۔لڑکی مسماة عابدہ پروین کو گزشتہ برس اگست میں ڈیرہ مراد جمالی تھانہ سٹی بلوچستان کی حدود سے رشتے کے تنازع پر اغوا کیا گیا تھا، ملزمان نے گھر میں گھس کر لڑکی کے باپ محمد ایوب کو قتل کیا اور اس کی بیٹی کو گھر سے قیمتی سامان سمیت اٹھا لیا تھا ۔

ملزمان کے خلاف کارروائی ڈسٹرکٹ ایسٹ پولیس نے بلوچستان کی پولیس پارٹی کے ساتھ مل کاروائی کی اور ملزمان گرفتار کر لیے گئے، جس کے بعد ملزمان اور مغویہ کو بلوچستان پولیس پارٹی کے حوالے کر دیا گیا۔