گیس کامسئلہ

232

فرح ناز

“امی گیس نہیں آرہی۔۔۔بتائیں روٹی کیسے ڈالوں۔۔؟ ارے گیس کی لوڈ شیڈنگ نے تو ذہنی کوفت میں مبتلا کردیا ہے۔۔روز روز گلی محلے میں یہی چے مگوئی ہے۔۔۔۔سوئی گیس جس کی فراہمی کراچی کے شہریوں کو صحیح انتظامی امور کے ساتھ ملتی تھی اب ماضی کا حصہ بن گئی ہے۔۔۔اب موجودہ صورتحال میں گیس کی لوڈ شیڈنگ کے باعث نہ بروقت کھانا مل رہا ہے اور اس سرد موسم میں ٹھنڈے پانی کا ستعمال انتہائی تکلیف دے بن گیا ہے۔۔۔اسکے علاوہ CNG کی ہڑتال نے کرایوں میں ناقابل برداشت اضافہ کردیاہے۔ہمارے ملک میں پیدا ہونے والی گیس بھی ہمیں مہیا نہیں تو اس سے بڑھ کر کیا بے بسی؟ یہ قدرتی وسائل کی بدنظمی ہی ہے جو وسائل کے باوجود ترسیل میں مسائل پیدا ہورہے ہیں۔۔۔اے کاش ہمارے حکمران ہمارےپرسان حال بن جائیں اور ہماری زندگی کی بنیادی ضروریات ہم تک مکمل اور احسن طریقے سے پہچائیں۔۔۔!